نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- بحرین کےنیشنل گارڈکےچیف آف اسٹاف کی جی ایچ کیوآمد
  • بریکنگ :- آرمی چیف سےبحرین کےنیشنل گارڈکےچیف آف اسٹاف کی ملاقات
  • بریکنگ :- ملاقات میں خطےکی سیکیورٹی صورتحال پرتبادلہ خیال،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- افغانستان کی سیکیورٹی صورتحال پرتبادلہ خیال کیاگیا، آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعاون پربھی تبادلہ خیال،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- پاکستان بحرین کیساتھ روایتی تعلقات برقراررکھناچاہتاہے، آرمی چیف
  • بریکنگ :- بحرین سےمختلف شعبوں میں طویل المدتی تعلقات چاہتےہیں،آرمی چیف
  • بریکنگ :- علاقائی امن کیلئےافغانستان پرعالمی اتفاق رائےپیداکرناہوگا، آرمی چیف
  • بریکنگ :- افغان عوام کی معاشی ترقی کیلئےمربوط کوششیں کرناہوں گی،آرمی چیف
  • بریکنگ :- معززمہمان نےمسلح افواج کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کوسراہا،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- معززمہمان کاپاکستان کیساتھ وسیع ترتعاون جاری رکھنےکےعزم کااظہار
Coronavirus Updates

ماحولیاتی خطرہ سب سے اہم عالمی ایجنڈا ،یاسین انور

ماحولیاتی خطرہ سب سے اہم عالمی ایجنڈا ،یاسین انور

دنیا اخبار

گرین فنانس کے لیے جی آئی پی اہم رابطہ کار ،سابق گورنراسٹیٹ بینک

کراچی(اسٹاف رپورٹر)چائنا گرین فنانس کمیٹی اور بیجنگ انسٹی ٹیوٹ آف فنانس اینڈ سسٹین ایبلٹی نے گلاسگو، برطانیہ میں آن لائن اور براہ راست فنانسنگ کلائمیٹ ایکشنز کے عنوان سے ایک سیمینار منعقد کیا۔ جی ایف سی کے چیئرمین اور بی آئی ایف ایس کے صدر ڈاکٹر ما جن نے کہا کہ چین میں پچھلے کچھ برس کے دوران ہم نے دنیا کی سب سے بڑی گرین قرضہ جاتی مارکیٹ اور دوسری سب سے بری گرین بانڈ مارکیٹ تشکیل دی ہے ۔ توقع ہے کہ چین میں ریگولیٹرز اور مالی مارکیٹ کے شرکا گرین فنانس معیارات کو بہتر بنائیں گے ۔جی آئی سینٹرل ایشیا آفس کے چیئرمین اور پاکستان کے مرکزی بینک کے سابق گورنر یاسین انور نے بتایا کہ ماحولیاتی خطرہ اس وقت سب سے اہم عالمی ایجنڈا ہے جس کے لیے جی آئی پی مالی نظام کو فروغ دینے کے سلسلے میں اہم رابطہ کار کا کردار ادا کرسکتا ہے تاکہ عالمی گرین پست سطح کی کاربن کا مقصد حاصل ہوسکے ۔ جی آئی پی کے ذریعے جو بین الاقوامی تعاون کا ایک اہم پلیٹ فارم ہے ، مالی ادارے بیشتر ترقی پذیر ممالک کو ذمہ دارانہ فنانسنگ فراہم کرسکتے ہیں جو ایک گرین مالی ایکوسسٹم کے قیام کے لیے سازگار ہے اور جس سے ‘بیلٹ اینڈ روڈ’ کے ممالک اور خطوں کو فائدہ ہوگا اور گرین اثاثوں تک متعلقہ ممالک کی رسائی بڑھے گی, نیز انہیں کاربن میں کمی کے اہداف حاصل کرنے میں مدد ملے گی۔بینک آف چائنا (لندن برانچ)، ایگریکلچرل بینک آف چائنا، اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک، کریڈٹ ایگری کول سی آئی بی، پنگ این گروپ، ایچ ایس بی سی، یو این انوائرنمنٹ، ایپک گرین سپلائی چین کوآپریشن نیٹ ورک اور لندن اسٹاک ایکسچینج کے ما ہرین نے ‘‘انٹرنیشنل کوآپریشن آن فنانشل سپورٹ فار کاربن نیوٹریلٹی’’ پر پینل گفتگو میں حصہ لیا اور کاربن سے پُر انڈسٹریز کی ٹرانزیشن فنانس، مالی اداروں کے کاربن نیوٹریلٹی اہداف، حیاتی تنوع کی فنانسنگ، ماحولیاتی معلومات کے انکشاف اور متعلقہ بین الاقوامی اقدامات کے بارے میں اپنے خیالات سے آگاہ کیا۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement