نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- امریکی اخبارنیویارک ٹائمزکی پنج شیرکی موجودہ صورتحال سےمتعلق رپورٹ
  • بریکنگ :- پنج شیرمیں لڑائی ختم ہوچکی ہے،امریکی اخبار
  • بریکنگ :- پنج شیرمیں پاکستان کےملوث ہونےسےمتعلق الزامات جھوٹ تھے،امریکی اخبار
  • بریکنگ :- پنج شیرکی اکثرآبادی لڑائی سےقبل ہی علاقہ چھوڑگئی تھی،امریکی اخبار
  • بریکنگ :- پنج شیرکےمرکزبازارک میں شدیدجنگ کےآثارانتہائی کم ہیں،امریکی اخبار
  • بریکنگ :- کچھ عمارتوں کےشیشےٹوٹےہیں،لیکن بلڈنگ اسٹرکچرکونقصان نہیں ہوا،امریکی اخبار
  • بریکنگ :- طالبان نےپنج شیرکےمختلف علاقوں سےبھاری اسلحہ برآمدکیا،امریکی اخبار
  • بریکنگ :- طالبان وادی پنج شیرمیں کافی عرصےسےمتحرک تھے،امریکی اخبار
  • بریکنگ :- پنج شیرکےکچھ شہریوں نےبھی طالبان کےقبضےمیں مدددی،امریکی اخبار
  • بریکنگ :- طالبان نےاحمدشاہ مسعودکےمقبرےکی مرمت کی،نیویارک ٹائمز
  • بریکنگ :- طالبان نےمقبرےکی حفاظت کیلئےجنگجوبھی تعینات کیےہیں،امریکی اخبار
Coronavirus Updates

تین چوکیوں کو تھانے بنانے کا فیصلہ تاحال نہیں کیا جاسکا

تین چوکیوں کو تھانے بنانے کا فیصلہ تاحال نہیں کیا جاسکا

دنیا اخبار

ایک سال سے سمری پولیس حکام کے دفاتر کی فائلوں میں دب کر رہ گئیشہریوں کا آرپی او، آئی جی سے فی الفور چوکیوں کو تھانے کا درجہ دینے کامطالبہ

فیصل آباد(صغیر سانول سے )متعلقہ تھانے سے کم ازکم 30 کلو میٹر دورہونے کی بنا پر ضلع کی تین چوکیوں کو تھانے کے درجہ دینے کے فیصلے پر ایک سال بعد بھی عملدرآمد نہ ہوسکا،تینوں چوکیوں کو تھانے بنانے کی سمری پولیس حکام کے دفاتر کی فائلوں میں دب کر رہ گئی۔ تفصیل کے مطابق گزشتہ برس ضلع فیصل آباد کی تین بڑی چوکیوں کو تھانوں میں تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا تینوں چوکیاں اپنے تھانوں سے تیس تیس کلومیٹر کے فاصلے پر ہیں،ان چوکیوں کے عملے کو وسیع علاقہ کورکرنا پڑتا ہے مگر عملہ کم ہونے اور تھانہ دورہونے کی وجہ سے جرائم کنٹرول کرنے میں دشواری پیش آرہی تھی جس پر سی پی او فیصل آباد کیپٹن(ر)محمد سہیل چودھری نے تھانہ صدر جڑانوالہ کی چوکی علی پور بنگلہ،تھانہ لنڈیانوالہ کی چوکی جسوآنہ بنگلہ اور تھانہ صدر کی چوکی رشید آباد کو تھانہ بنانے کی سمری تیارکی تھی جسے ریجنل پولیس آفیسر راجہ رفعت مختار نے سمری سی پی او سے منگواکر آئی جی پنجاب کو عملدرآمد کیلئے بھجوادی تھی لیکن ایک سال کا عرصہ گزرجانے کے باوجود تاحال ان چوکیوں کو تھانے بنانے کا فیصلہ نہیں کیا جاسکا جس کی وجہ سے تینوں چوکیوں کے عوام کو متعلقہ تھانوں تک پیشیوں پر جاتے ہوئے شدید خواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ شہریوں نے آر پی او رفعت مختار راجہ اور آئی جی پنجاب سے اپیل کی کہ فی الفور ان چوکیوں کو تھانوں کا درجہ دیا جائے تاکہ ان کے مسائل کا ازالہ ممکن ہوسکے ۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں