نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- اسرائیلی فورسز نے فلسطینی علاقےشیخ جراح میں فلسطینی کاگھرگرادیا، عرب میڈیا
  • بریکنگ :- بیت المقدس:اسرائیلی فورسزدروازہ توڑکرگھر میں داخل ہوئی اوراہلخانہ کوگرفتارکیا
  • بریکنگ :- بیت المقدس:قابض فورسز نے گھرکےسربراہ پرتشددکیا، عرب میڈیا
Coronavirus Updates

محکمہ ماحولیات کی غفلت، رشید آباد میں کیمیکلز سے گندے کپڑے صاف کرنے کا کام جاری

محکمہ ماحولیات کی غفلت، رشید آباد میں کیمیکلز سے گندے کپڑے صاف کرنے کا کام جاری

فیصل آباد(جنرل رپورٹر)محکمہ ماحولیات کی غفلت اور سستی کے باعث رشید آباد کے علاقے میں کیمیکلز اور بلیچ سے استعمال شدہ گندے کپڑوں کو صاف کرنے کا کام کیا جارہا ہے ۔

ان کپڑوں کو دھاگہ اور رسیاں بنانے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے یہ عمل علاقہ مکینوں کے لیے اذیت کا سبب بنا ہوا ہے کپڑا صاف کرنے کے ان مراکز کے ارد گرد کئی کلومیٹر تک شہریوں کا سانس لینا مشکل ہوجاتا ہے کیمیکلز اور بلیچ سے اٹھنے والی تیز بدبو کے باعث علاقے میں سانس کی بیماریاں تیزی سے بڑھ رہی ہیں شہریوں کا کہنا ہے جب گندے کپڑے لاکر ان مراکز پر صاف کرنے کے لیے پھینکے جاتے ہیں۔

تو علاقہ تعفن زدہ ہوجاتا ہے کئی کئی روز تک بدبو سے جان نہیں چھوٹی مگر جب ان کپڑوں کو کیمیکلز اور بلیچ میں ڈال کر رکھا جاتا ہے تو کپڑا صاف کرنے والے ان مراکز کے پاس سے گزرنا ناممکن ہوجاتا ہے تیز اور چھبنے والی بدبو کے باعث دم گھٹنے لگتا ہے۔

محکمہ ماحولیات ان مراکز کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کرتا اس سلسلے میں جب ڈپٹی ڈائریکٹر محکمہ ماحولیات فرحت عباس کموکا سے موقف لینے کے لیے رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی تو وہ رابطہ کرنے سے ہی گریزاں رہے شہریوں کا کہنا ہے کہ مراکز کے مالکان بااثر ہونے کے باعث محکمہ ماحولیات نے ان کے سامنے گھٹنے ٹیک دئیے ہیں۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں