نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- جام کمال کےدورمیں بدامنی،بےروزگاری اوراداروں کی کارکردگی متاثرہوئی،متن
  • بریکنگ :- کوئٹہ:بلوچستان اسمبلی کااجلاس آج شام 4 بجے ہوگا
  • بریکنگ :- اجلاس میں وزیراعلیٰ جام کمال کیخلاف تحریک عدم اعتمادپیش کی جائےگی
  • بریکنگ :- تحریک عدم اعتمادپربی اےپی کے14 ارکان کےدستخط ہیں
Coronavirus Updates

گجرات کو 70فیصد کم گندم مل رہی:فلورملزمالکان

گجرات کو 70فیصد کم گندم مل رہی:فلورملزمالکان

دنیا اخبار

ارکان اسمبلی کوٹہ بڑھانے کیلئے حکومت کو قائل کریں:ارسلان پرویز

گجرات(سٹی رپورٹر ، نا مہ نگار )فلور ملزایسوسی ایشن ضلع گجرات کا اہم اجلاس مرکزی وائس چیئرمین ارسلان پرویز چودھری کی زیر صدارت ہوا جس میں سابق چیئرمین افتخار احمد مٹو، احمد حسن مٹو، معوذ خان ،چودھری رؤف، محمد سرور ،سلیمان جاوید ، چودھری عثمان پرویز سمیت دیگر ملز مالکان نے شرکت کی۔ مرکزی وائس چیئرمین ارسلان پرویز نے کہا کہ گجرات کی فلور ملوں کو کوٹہ 70 فیصد کم مل رہا ہے اور یومیہ 12ہزار کے بجائے محض 3ہزار بوری گندم فراہم کی جا رہی ہے ،گجرات کو حکومت سے ملنے والا کوٹہ بہت کم ہے ، 70 فیصد آبادی کو آٹے کی کمی کا سامنا ہے ۔انہوں نے کہا کہ گجرات سے تعلق رکھنے والے ایم این ایزاور ایم پی ایز آبادی کے لحاظ سے کوٹہ بڑھانے کیلئے حکومت کو قائل کریں ۔ افتخار احمد مٹو نے کہا کہ محکمہ فوڈ نے 2 لاکھ گندم کی بوری خریدنا تھی مگر ایک لاکھ، 96 ہزار گندم کی بوری خریدی گئی اور گورنمنٹ اپنا ٹارگٹ بھی پورا نہیں کر سکی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سے پابندیاں بلا جواز ہیں ، ان کو ختم کرکے فلور ملوں کو آزادانہ ماحول میں بزنس کرنے کی اجازت دی جائے ۔ چودھری رؤف نے کہا کہ حکومت کسانوں کو بجلی اور کھاد پر سبسڈی فراہم کرے تو گندم اور دیگر اجناس بیرون ممالک سے امپورٹ نہیں کرنا پڑیں گی۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں