آلودہ پانی اور ویسٹ سامان کی تلفی کا منصوبہ ختم

آلودہ پانی اور ویسٹ سامان کی تلفی کا منصوبہ ختم

گوجرانوالہ (سٹی رپورٹر)حکومتی اداروں کی غفلت کے باعث گوجرانوالہ کی سرامکس انڈسٹریز اور سینکڑوں فرنسز ،فیکٹریوں کے ویسٹ سامان کی تلفی اور آلودہ پانی کو محفوظ جگہ پر منتقل نہ ہوسکا شہریوں کو بیماریوں سے بچانے اور۔۔۔

 آلودہ پانی اورویسٹ سامان کی تلفی کامنصوبہ بھی ختم کردیاگیاسابق دور حکومت میں چیمبر آف کامرس کی جانب سے گوجرانوالہ کی 100سے زائد سرامکس انڈسٹریز اور سینکڑوں فرنس ،فیکٹریوں کے ویسٹ سامان کی تلفی اور آلودہ پانی کو محفوظ بنانے کیلئے منصوبہ تیار کیا تھا جس کیلئے ویسٹ مینجمنٹ کمپنی اور ضلعی انتظامیہ کے ساتھ باقاعدہ معاہدہ طے کرکے شہری آبادی میں بڑھتی ہوئی آلودگی ،گندے پانی کی بھر مار پرقابو پاکر مہلک بیماریوں کا خاتمہ یقینی بنانا تھا جس کیلئے تمام فرنس ،سرامکس انڈسٹریز اور فیکٹریوں سے معاوضہ وصول کیا جائے گا منصوبہ کے مطابق آلودہ پانی کو کچی آبادیوں میں نکاس کرنے کی بجائے فیکٹریوں کے اندر واٹر ویسٹ ٹینک تیار کئے جائینگے تاکہ مضرصحت اور آلودہ پانی کے اثرات عوام پر نہ پڑے آلودہ پانی اور مضر صحت ویسٹ سامان کے باعث شہری آبادیوں میں مہلک امراض پھیل رہے ہیں شہریوں کو صحت مند معاشرہ فراہم کرنے کیلئے گوجرانوالہ چیمبر آف کامرس نے سرامکس انڈسٹریوں اور فیکٹریوں کے ویسٹ سامان کو تلف کرنے اورآلودہ پانی کومحفوظ بنانے کا پلان تیارکیا لیکن حکومتی اداروں کی عدم توجہی کے باعث منصوبے پر عمل درآمد نہ ہوسکا اور اے ڈی پی میں منصوبے کو ختم کردیاگیا۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں