ضلع کے 300 اداروں۔،ہسپتالوں اور مراکز صحت کا پانی مضر صحت،بیماریاں پھیلنے کا خدشہ

ضلع  کے  300  اداروں۔،ہسپتالوں  اور  مراکز  صحت  کا  پانی  مضر  صحت،بیماریاں  پھیلنے  کا  خدشہ

گوجرانوالہ (سٹی رپورٹر) ضلع کے 300کے قریب تعلیمی اداروں ،ہسپتالوں اور مراکز صحت کا پانی مضر صحت ہوچکا ،شہریوں کی بڑی تعداد گندا پانی پینے پر مجبور ہے اور۔۔۔

 مختلف بیماریوں میں مبتلا ہونے کے خدشات بڑھ گئے ہیں جبکہ صاف پانی کی فراہمی یقینی بنانے کیلئے محکمہ صحت نے رپورٹ پنجاب حکومت کو ارسال کردی ۔ ذرائع کے مطابق صاف پانی کی ٹیموں نے ضلع کے 1200سے زائد تعلیمی اداروں ،ہسپتالوں اور مراکز صحت کے پانی کے نمونہ جات حاصل کئے جن میں 340سرکاری تعلیمی ادارے ، 325 پرائیویٹ سکول اور300سے زائد سرکاری وغیر سرکاری ہسپتال ،مراکز صحت اورڈسپنسریاں شامل ہیں۔ لیبارٹری ٹیسٹ کے بعد ضلع کے250 سرکاری کالجوں ، سکولوں اور نجی تعلیمی اداروں میں پینے کیلئے گندے پانی کا انکشاف ہوا ہے جبکہ 50سرکاری وپرائیویٹ ہسپتال اور مراکز صحت میں بھی پانی پینے کے قابل نہ نکلا ،فلٹریشن پلانٹس کی مرمت نہ ہونے سے مضر صحت پانی کے باعث سینکڑوں طلبا وطالبات مہلک امراض میں مبتلا ہورہے ہیں ۔شہریوں نے اعلیٰ حکام سے فوری نوٹس لینے کامطالبہ کیاہے ۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں