نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- کراچی:گجرنالہ پرپیشرفت رپورٹ کہاں ہے؟چیف جسٹس گلزاراحمد
  • بریکنگ :- بورڈآف ریونیوکی جانب سےرپورٹ جمع کرائی ہے،ایڈووکیٹ جنرل سندھ
  • بریکنگ :- 258 ایکڑاراضی پرمتاثرین کومتبادل زمین مختص کردی،اے جی سندھ
  • بریکنگ :- کراچی:6 ہزار سےزائدگھربنائےجائیں گے،ایڈووکیٹ جنرل سندھ
  • بریکنگ :- کراچی:سندھ حکومت کےپاس بجٹ کی کمی ہے،ایڈووکیٹ جنرل
  • بریکنگ :- وزراکیلئےفنڈزہیں،عوام کیلئےنہیں،باقی سارےامورچلارہےہیں،چیف جسٹس
  • بریکنگ :- ابھی پیسےآئےنہیں،ساراجہاں لینےآگیا،جسٹس اعجازالاحسن
  • بریکنگ :- جب گاڑیاں خریدنی ہوتی ہیں تو پیسےآجاتےہیں،جسٹس اعجازالاحسن
  • بریکنگ :- اگرزلزلہ یاسیلاب آجائےتوپھرکیاکریں گے؟جسٹس اعجازالاحسن
  • بریکنگ :- کوئی آفت جائےتوکیاایک سال تک بجٹ کاانتظارکریں گے،جسٹس اعجازالاحسن
  • بریکنگ :- متاثرین کوگھردینےتک وزیراعلیٰ اورگورنرہاؤس الاٹ کردیتےہیں،چیف جسٹس
  • بریکنگ :- لوگوں کوکہتےہیں وزیراعلیٰ،گورنرہاؤس کےباہرٹینٹ لگالیں،چیف جسٹس
  • بریکنگ :- ورلڈبینک کے کتنےمنصوبےہیں مگرکچھ نہیں ہورہا،چیف جسٹس
  • بریکنگ :- جنہوں نےزمینیں الاٹ کیں،ان کیخلاف کیاایکشن لیا؟چیف جسٹس برہم
  • بریکنگ :- کراچی:یہ تو 40 سال پرانامسئلہ ہے،ایڈووکیٹ جنرل سندھ
  • بریکنگ :- آپ انتہائی غیرذمہ دارانہ بیان دےرہےہیں،آپ کی ترجیحات کچھ اورہیں،عدالت
  • بریکنگ :- جوپیسےسپریم کورٹ نےوصول کرائےآپ نےنظررکھ لی،وہ آپ کےنہیں،عدالت
  • بریکنگ :- ہم نے طےکرنا ہےکہ اس پیسےکاکیاکرنا ہے،جسٹس اعجازالاحسن
  • بریکنگ :- ایک ایک پیسہ سپریم کورٹ طےکریگی کہ کہاں لگےگا،جسٹس اعجازالاحسن
  • بریکنگ :- گجرنالہ تجاوزات کیس کی سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں سماعت
Coronavirus Updates

خواتین اور بچوں پر تشدد کے حوالے سے احتجاجی مظاہرہ

خواتین اور بچوں پر تشدد کے حوالے سے احتجاجی مظاہرہ

دنیا اخبار

نور مقدم ، قرۃ العین، صائمہ،نسیم بی بی کا قتل نا قابل قبول ہے ،سول سوسائٹی

اسلام آباد (سیا سی رپورٹر)سسٹین ایبل سوشل ڈویلپمنٹ آرگنائزیشن اور سول سوسائٹی کیجانب سے خواتین اور بچوں پر تشدد کے حوالے سے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، نور مقدم ، قرۃ العین، صائمہ اور پھر نسیم بی بی اور اسکے 14 ماہ کے بچے کا جس بے رحمی اور بے دردی سے قتل کیا گیا وہ نا قابل قبول ہے ، ایس ایس ڈی او اور سول سوسائٹی مطالبہ کرتی ہے کہ قانون کو مدنظر رکھتے ہوئے فی الفور ملزمان کو کڑی سے کڑی سزا دے کر کیفر کردار تک پہنچایا جائے ،ملزمان کے ٹرائل تیزی سے کئے جانے چاہئیں اور جہاں پر قوانین میں ترامیم کی ضرورت ہے ان میں تبدیلی کی جائے ،ایس ایس ڈی او کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر سید کوثر عباس نے کہا کہ خواتین اور بچوں پر تشدد اور ہراسگی کے واقعات روز بروز بڑھتے چلے جارہے ہیں۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں