نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- کھربوں روپےکےبجٹ سےآپ کےپاس 10 ارب نہیں،جسٹس اعجازالاحسن
  • بریکنگ :- آپ سندھ حکومت ہیں،ایڈووکیٹ جنرل صاحب ! جسٹس اعجازالاحسن
  • بریکنگ :- یہ سب ذمہ داری آپ کی تھی،سپریم کورٹ کوکرناپڑرہاہے،جسٹس اعجازالاحسن
  • بریکنگ :- پوراکراچی گند سےبھراہے،چیف جسٹس گلزاراحمد
  • بریکنگ :- کیایہ کراچی شہر ہے،یہ توگاربیج دکھائی دیتاہے،چیف جسٹس
  • بریکنگ :- حکمران طبقےکوشہر کی کوئی پرواہ نہیں،چیف جسٹس گلزاراحمد
  • بریکنگ :- گٹرابل رہےہیں،تھوڑی سی بارش سےشہرڈوب جاتاہے،چیف جسٹس
  • بریکنگ :- شہراس طرح چلایاجاتاہے؟ایک انچ کابھی کام نہیں ہواکراچی میں،عدالت
  • بریکنگ :- یہ ہےسندھ حکومت، کہتےہیں پیسےنہیں ہیں،چیف جسٹس گلزاراحمد
  • بریکنگ :- کھربوں روپےکی باہر سےمددآتی ہے،کیاکرتےہیں،کچھ پتہ نہیں،چیف جسٹس
  • بریکنگ :- غیرقانونی قبضے،سٹرکیں بدحال،کچھ نہیں کراچی میں،چیف جسٹس
  • بریکنگ :- سندھ حکومت مکمل بینک کرپٹ کی جانب کھڑی ہے،چیف جسٹس
  • بریکنگ :- اس سب کی ذمہ داری سندھ حکومت پرعائدہوتی ہے،چیف جسٹس
  • بریکنگ :- سندھ حکومت کوشرم آنی چاہیے،چیف جسٹس کےریمارکس
  • بریکنگ :- جس بلڈنگ کواٹھاؤاس کابراحال ہے،چیف جسٹس گلزاراحمد
Coronavirus Updates

ہالا میں باپ کے ہاتھوں قتل لڑکی کی قبر کشائی کا حکم

ہالا میں باپ کے ہاتھوں قتل لڑکی کی قبر کشائی کا حکم

دنیا اخبار

میرپورخاص میں عید کے دن لاپتہ نوجوان کے قتل کا معمہ حل،دو ملزم گرفتار

ہالا،میرپورخاص(نمائندہ دنیا، بیورو رپورٹ) تین روز قبل نیو سعیدباد کے نواحی گاؤں بہشت باغ میں فون پر غیر محرم سے بات کرنے پر نوجوان حاملہ لڑکی یاسمین کو گلا گھونٹ کر قتل کرنے میں ملوث باپ ٹوھ حاجانو کو عدالت میں پیش کیا گیا جہاں اسے چار روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا گیا جبکہ اس موقع پر مقتولہ یاسمین کی والدہ بھاگل نے عدالت کو بتایا کہ قتل کے بعدبیٹی کے منہ میں زہریلی زرعی دوا ڈالی گئی تاکہ لگے کہ لڑکی نے خودکشی کی ہے اور قاتل بچ جائیں ،مقتولہ کی والدہ کے بیان اور پولیس کی جانب سے قبر کشائی کے بعد لاش کے پوسٹ مارٹم کی درخواست پر عدالت نے ڈی جی اور سیکریٹری ہیلتھ کو لیٹر جاری کردیا جس میں کہا گیا کہ فوری میڈیکل ٹیم تشکیل دے کر اور قبرکشائی کرکے لاش کا پوسٹ مارٹم کرنے کے بعد 10 روز میں رپورٹ عدالت میں جمع کرائی جائے دوسری جانب پولیس کا کہنا ہے کہ مقتولہ کے چچا نواب حاجانو کو بھی جلد گرفتار کرلیا جائے گا۔ میرپورخاص سے نمائندے کے مطابق عید کے دن 21جولائی کو گھر سے لاپتہ ہونے والے نوجوان زاہد کنبھار،جس کی لاش دو دن بعد چودھری افتخار جٹ کی غیر آباد زمین نزد بیلاڑو سے ملی تھی،کے قتل کا معمہ سی آئی اے پولیس اور ایس ایچ او میرواہ نے حل کرتے ہوئے قتل میں ملوث دو ملزمان کو گرفتار کرکے آلہ قتل اور مقتول کی موٹر سائیکل بر آمد کرلی۔ ملزمان سورج نارائن اور الہٰی بخش رند نے جرم کا اعتراف کرلیا ہے ۔دوران تفتیش ملزمان نے بتایا کہ ہم نے زاہد کنبھار کو غیرت کے نام پر کلہاڑی کے وار کر کے قتل کیا اور لاش چودھری افتخار جٹ کی غیر آباد زمین کی جھاڑیوں میں چھپا دی تھی۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں