نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- لاکھوں افغان مہاجرین اب بھی پاکستان میں رہائش پذیر ہیں،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- ہماری زبان ،مذہب مشترکہ اور رسم ورواج بھی ایک جیسے ہیں،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- ہم ایک اسلامی ریاست قائم کرناچاہتےہیں،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- کشمیری ہمارے بھائی ہیں،ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم بند کرائے،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- کشمیری،میانمار اور فلسطینی بھائیوں کی سیاسی وسفارتی حمایت کریں گے،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- کئی ممالک نے امریکا اور عالمی برادری کے سامنے ہمارے حق میں آواز اٹھائی،ترجمان
  • بریکنگ :- 6روز قبل چین اور روس نے بھی ہماری حکومت کے حق میں بات کی،ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- قطر،ازبکستان اور دیگر ممالک نے بھی مثبت موقف اپنایا،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- پاکستان ہمارا ہمسایہ ملک ہے،ان کا موقف قابل تحسین ہے،ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- افغانستان کے ساتھ عالمی برادری کے روابط ضروری ہیں،ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- افغانستان کو تجارت اور اقتصادی امور میں ہمسایہ ممالک کی ضرورت ہے،ترجمان
  • بریکنگ :- توقع ہے ہمسایہ ممالک اپنا مثبت کردار جاری رکھیں گے،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- پنج شیر میں لڑائی ختم ہوچکی ہے،ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- بیشترمقامی عمائدین ،علمائے کرام اور مجاہدین ہمارے ساتھ ہیں،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- ہم کسی کے ساتھ جنگ نہیں چاہتے،ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- پوری دنیا کے ساتھ بہتر تعلقات چاہتےہیں،ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- اگر کوئی لڑائی یا حملے کی خواہش رکھتاہے تو سخت جواب دیاجائےگا،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- افغانستان میں امن کے بعد ہماری ترجیح ہے کہ تجارت فروغ پائے،ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- افغانستان کو پشاور اور پاکستان کے دیگر علاقوں سے منسلک کیاجائےگا،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- سی پیک منصوبہ اہم ہے،تھوڑی تحقیق کی ضرورت ہے،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- چاہتے ہیں سی پیک میں شامل ہوں،ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- پاکستان ہمارا پڑوسی ملک اور افغانوں کا دوسرا گھر ہے،ترجمان طالبان
Coronavirus Updates

مچھر مار مہم شروع نہ ہوسکی، ڈینگی کے کیسز میں اضافہ

مچھر مار مہم شروع نہ ہوسکی، ڈینگی کے کیسز میں اضافہ

دنیا اخبار

یکم جنوری تا 31اگست 1365 ڈینگی وائرس کے کیسز رجسٹرڈ کئے گئے،مچھر اور مکھیوں کی بہتات سے شہری دیگر بیماریوں میں بھی مبتلا ہورہے ہیں

کراچی (رپورٹ: کفیل الدین فیضان )شہر میں ڈینگی وائرس کے کیسز میں اضافہ ہونے لگا ہے، ضلعی انتظامیہ کی جانب سے ڈینگی وائرس سے بچاؤ کے لئے مچھر مار مہم کا آغاز تاحال نہیں کیا جاسکا ہے ،جس کے سبب ڈینگی وائرس کے کیسز میں مزید اضافہ کا خدشہ ہے۔ تفصیلات کے مطابق ڈینگی وائرس کیسز میں اضافہ روکنے میں ضلعی انتظامیہ مکمل طور پر ناکام ہوگئی ہے۔ محکمہ صحت سندھ کے شعبہ حشرات الارض کے اعدادو شمار کے مطابق یکم جنوری تا 31اگست تک صوبے میں 1365 ڈینگی وائرس کے کیسز رجسٹرڈ کئے گئے جن میں سے 1223 صرف کراچی میں رپورٹ ہوئے ہیں۔ محکمہ صحت سندھ کے مشترکہ اعداد و شمار کے مطابق ، ویکٹر بورن ڈیزیز ڈپارٹمنٹ نے صوبہ سندھ میں کل 1365 کیسز رجسٹرڈ کیے ہیں جن میں سے 120 جنوری میں ، فروری میں 64 ، مارچ میں 84 ، اپریل میں 161 ، مئی میں 189 ، جون میں 249 ، جولائی میں 189 ، اگست میں 281 اور 28 غیر متعین / غیر جوابی تھے ۔ سندھ میں کل 1336 کیسز میں سے 1223 اس سال کراچی میں رجسٹرڈ ہوئے ۔ضلع وسطی میں 317 ،ضلع شرقی میں 304 ،ضلع جنوبی میں 215 ،ضلع غربی میں 207 ، ضلع کورنگی میں 116 اور ضلع ملیر میں ڈینگی وائرس کے 52 کیسز ریکارڈ کیے گئے ۔ شہر میں مچھر اور مکھیوں کی بہتات ہوجانے کے باعث ڈینگی کے ساتھ ساتھ شہری دیگر بیماریوں میں بھی مبتلا ہورہے ہیں۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں