نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- تیونس کےقریب سمندرمیں تارکین وطن کی کشتی ڈوب گئی،خبرایجنسی
  • بریکنگ :- تیونس:4تارکین وطن ہلاک،19لاپتہ ہوگئے،خبرایجنسی
  • بریکنگ :- ریسکیوٹیموں نے 7افرادکوبچالیا،سرچ آپریشن جاری،خبرایجنسی
Coronavirus Updates

مشتاق یوسفی صاحب اسلوب نثر نگار تھے، افتخار عارف

مشتاق یوسفی صاحب اسلوب نثر نگار تھے، افتخار عارف

دنیا اخبار

آصف فرخی بہت ہی محبت کرنے والے اور ملنسار انسان تھے، جاوید صدیقی ،آرٹس کونسل آن لائن عالمی مذاکرے سے احمد شاہ، عامر حسین ودیگر کا خطاب

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی کے زیر اہتمام ’’نثری اسلوب، مشتاق احمد یوسفی اورآصف فرخی‘‘ کے حوالے سے عالمی مذاکرے کا آن لائن انعقاد کیاگیا، جس کی صدارت افتخار حسین عارف نے کی، جبکہ مہمان خصوصی جاوید صدیقی تھے ۔ شرکا میں صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ، برطانیہ سے عامر حسین، کینیڈا سے شاہدہ حسن، لاہور سے ناصر عباس نیئرشامل تھے ، جبکہ نظامت کے فرائض ڈاکٹر فاطمہ حسن نے انجام دیے۔ افتخار عارف نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مشتاق یوسفی صاحب اسلوب نثر نگار تھے، ان کی کتابوں سے تخلیقی سفر کی وسعت اور عظمت کا احساس ہوتا ہے۔ آصف فرخی کے حوالے سے انہوں نے کہاکہ آصف سے ہماری محبت بہت پرانی ہے ، انہوں نے جو نثر اور طرز تحریر چھوڑا وہ نہایت اعلیٰ اور قابل تحسین ہے۔ بھارت سے جاوید صدیقی نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ آصف فرخی سے ’’جشن ریختہ‘‘ میں ملاقات ہوئی، وہ بہت ہی محبت کرنے والے اور ملنسار انسان تھے، مشاق یوسفی سے کبھی آمنا سامنا نہیں ہوا، ان کی کتاب چراغ تلے پڑھ کر مجھ پر عجیب سی کیفیت طاری ہوگئی۔ برطانیہ سے عامر حسین نے گفتگو میں کہاکہ آصف فرخی کے ساتھ بحث و مباحثہ کرنے میں بہت مزا آتا تھا۔ اس موقع پر ناصر عباس نیر، محمد احمد شاہ، پروفیسر شاہدہ حسن نے بھی خطاب کیا۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں