نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- فیصل آباد:سربراہ پی ڈی ایم مولانا فضل الرحمان کا جلسے سے خطاب
  • بریکنگ :- احتساب کا ڈرامہ اب ختم ہوچکا ہے،مولانا فضل الرحمان
  • بریکنگ :- پی ڈی ایم نے آپ کااحتساب کرکےکیفرکردارتک پہنچانا ہے،مولانافضل الرحمان
  • بریکنگ :- غریب عوام پرمہنگائی کے پہاڑتوڑدیئے ہیں،مولانا فضل الرحمان
  • بریکنگ :- روزانہ کی بنیاد پرقیمتوں میں اضافہ ہوتاہے،مولانا فضل الرحمان
  • بریکنگ :- معاشی صورتحال خراب ہوتوریاست اپناوجودبرقرارنہیں رکھ سکتی،فضل الرحمان
  • بریکنگ :- دنیامیں ایک بارپھرمعیشت کی جنگ شروع ہوچکی ہے،مولانا فضل الرحمان
  • بریکنگ :- فیصل آباد:اداروں کومضبوط دیکھنا چاہتے ہیں،مولانا فضل الرحمان
  • بریکنگ :- ہرایک کواپنے دائرےمیں رہ کرکام کرنا ہوگا،مولانا فضل الرحمان
  • بریکنگ :- فیصل آباد:ملکی معیشت کوتباہ کردیا گیا،مولانا فضل الرحمان
Coronavirus Updates

جامعہ اردو، مستقل وائس چانسلر کی تقرری کا مطالبہ

جامعہ اردو، مستقل وائس چانسلر کی تقرری کا مطالبہ

دنیا اخبار

انتظامی بحران کے حل کیلئے فوری سینیٹ کا اجلاس طلب کیا جائے ،انجمن اساتذہ،ڈپٹی چیئر سینیٹ نگران کے اہل نہیں، بے ضابطگیوں کی تحقیقات کی جائے، اجلاس

کراچی (اسٹاف رپورٹر)وفاقی جامعہ اردو کا انتظامی بحران دور نہ کیا جاسکا، انجمن اساتذہ عبد الحق کیمپس وفاقی اردو یونیورسٹی کے ہنگامی اجلاس میں صدر مملکت اور یونیورسٹی کے چانسلر سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ یونیورسٹی میں شدید انتظامی بحران کے حل کے لئے فوری طور پر سینیٹ کا اجلاس طلب کیا جائے، یونیورسٹی میں نگران کی موجودگی سے تعلیمی، انتظامی اور مالی مسائل میں اضافہ ہو رہا ہے ، ڈپٹی چیئر سینیٹ یونیورسٹی کے نگران کی اہلیت نہیں رکھتے ، مستقل وائس چانسلر کی غیر موجودگی میں یونیورسٹی کے سینئر پروفیسر کو عارضی چارج دیا جائے، یونیورسٹی میں مسائل کا حل مستقل وائس چانسلر کی موجودگی ہے۔ انجمن اساتذہ نے جاری بیان میں کہا کہ سابق قائم مقام رجسٹرار ڈاکٹر صارم کے خلاف سلیکشن بورڈ میں بے ضابطگیوں کی تحقیقات کا آغاز کرنے پر ڈاکٹر صارم اور سابق قائم مقام وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر روبینہ مشتاق کے درمیان اختلافات پیدا ہوئے ، موجودہ انتظامیہ نے تحقیقاتی کمیٹی کے اراکین تبدیل اور تعداد بھی کم کردی ہے، موجودہ اراکین سلیکشن بورڈ کمیٹی کا حصہ ہیں، اب یہ اراکین کس طرح شفاف تحقیقات کرا سکتے ہیں۔ انجمن اساتذہ نے مطالبہ کیا کہ سلیکشن بورڈ میں بے ضابطگیوں کی شفاف تحقیقات کرائی جائیں، یونیورسٹی میں تمام انتظامی عہدوں پر مستقل افسران کا تقرر کیا جائے اور انتظامی عہدوں پر قائم مقام افراد کا تقرر ختم کیا جائے۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں