نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- ہرتھانےکاپولیس بجٹ منظورہوتاہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- منظورشدہ بجٹ تھانے کونہیں دیاجاتا،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- تھانیدارکے پاس قلم اورسیاہی کےپیسے نہیں ہوتے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- یقینی بنایا ہے کہ فنڈتھانےکوہی دیاجائےگا،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- شواہد کی ریکارڈنگ کیلئےکئی دن درکار ہوتے ہیں،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- انگلینڈمیں شواہدجمع کرنےکیلئےلائیوریکارڈنگ ہوتی ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- بیرون ملک یاشہررہنےوالوں کےبیان ویڈیولنک کےذریعے ریکارڈہوں گے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- ان کیسز پر توجہ دی جائے گی جن میں شواہدموجود ہوں گے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- عادی مجرموں سے پلی بارگین نہیں کی جائےگی،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- 5سال کی سزاپانےوالا 20 سال تک سزاکاٹتارہتا ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- اس نظام میں جج فیصلہ کرےگاجرم کی نوعیت کیا ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- پلی بارگین چھوٹے جرائم کیلئے ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- مقصد یہ ہےبڑےجرائم پرتوجہ دی جاسکے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- لوئرکورٹس میں وکلاکےالتوالینےسےفیصلوں میں تاخیرہوتی ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- گواہوں کے تحفظ کی بھی پالیسی بنادی گئی ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- وزیراعظم کومحسوس ہوایہ کام وزارت قانون کرسکتی ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- منگل کومسودہ کابینہ میں پیش کیاجائےگا،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- مسودہ پارلیمان میں پیش کیاجائےگا،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- اپوزیشن سیاست نہ کرے،اس قانون کوپاس کرے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- تمام اسٹیک ہولڈرزسےمشاورت کرکےمسودہ تیارکیاگیا،فروغ نسیم
Coronavirus Updates

ڈاکٹرنوشین ہلاکت کیس،فرانزک رپورٹ میں خودکشی کی تحریرمشکوک

ڈاکٹرنوشین ہلاکت کیس،فرانزک رپورٹ میں خودکشی کی تحریرمشکوک

تین رکنی فرانزک ٹیم کے مطابق سوسائیڈل نوٹ پرکوئی واضح یا شناختی انگلیوں کے نشان نہیں ملے

لاڑکانہ(بیورورپورٹ)چانڈکا میڈیکل کالج گرلز ہاسٹل کے کمرے سے فورتھ ایئر اسٹوڈنٹ ڈاکٹر نوشین کاظمی کی پنکھے سے لٹکی لاش ملنے کے واقعے کو 14 روز گزر چکے ہیں تاہم پولیس واقعے کے اصل محرکات معلوم نہیں کرسکی ۔اسسٹنٹ انسپکٹر جنرل آف پولیس فرانزک ڈپارٹمنٹ کراچی نے ڈاکٹر نوشین کی لکھائی سے متعلق لاڑکانہ پولیس کے بھیجے گئے شواہد کی روشنی میں رپورٹ جاری کر دی ، فرانزک ڈپارٹمنٹ کے تین ماہرین قلندر بخش، ایس ایم متین اور محمد شکیل انور کے دستخط سے جاری شدہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ انہیں لاڑکانہ پولیس کی جانب سے جو دستاویزات فراہم کی گئیں ان میں سے 6 رجسٹر بکس، ڈائری اور جائے وقوع سے ملنے والے کاغذ کے مختصر نوٹ کا انہوں نے جدید طریقوں اور مختلف زاویوں سے معائنہ کیا جس کے مطابق لکھائی تو میچ کرتی ہے لیکن مبینہ سوسائیڈل نوٹ پرکوئی واضح یا شناختی انگلیوں کے نشان نہیں ملے ، رپورٹ میں اس جانب نشاندہی سے مبینہ سوسائیڈل نوٹ مشکوک بنتا جا رہا ہے ، دوسری جانب ڈاکٹر نوشین کے والد نے ایک مرتبہ پھر واقعے کی جوڈیشل انکوائری کا مطالبہ دہراتے ہوئے کہا ہے کہ ان کا مطالبہ نہیں مانا جا رہا، علاوہ ازیں پولیس کو ڈاکٹر نوشین کے گلے سے ملنے والی رسی، کمرے سے ملنے والے فنگر پرنٹس سمیت کیمیکل اور ہیسٹوپیتھالوجی رپورٹ کا بھی انتظار ہے جس کی روشنی میں تحقیقات کو آگے بڑھایا جائے گا تاہم جامعہ انتظامیہ اور پولیس اب تک 24 نومبر کو واقعے والے روز ہاسٹل کا دروازہ کس نے اور کیوں توڑا سے متعلق شواہد سامنے نہیں لا سکی ہے جبکہ 3 سال قبل بھی نمرتا چندانی واقعے میں بھی ہاسٹل کے کمرے کا دروازہ توڑ دیا گیا تھا جسے شواہد مٹانے کی کوشش قرار دیا گیا تھا۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں