لاڑکانہ ،دکانوں میں آتشزدگی، لاکھوں مالیت کا سامان خاکستر

لاڑکانہ ،دکانوں میں آتشزدگی، لاکھوں مالیت کا سامان خاکستر

لاڑکانہ،ٹنڈو آمد (بیورو رپورٹ، نمائندہ دنیا) لاڑکانہ شہر کی منہل آباد کالونی ایئر پورٹ روڈ پر واقع ڈرائی کلینر اور استری کی دکان میں گزشتہ شب شارٹ سرکٹ کی وجہ سے آگ بھڑک اٹھی۔۔۔

 جس کے نتیجے میں دکان میں موجود 8 لاکھ روپے کے کپڑوں کے جوڑے ، نقدی سمیت دیگر سامان خاکستر ہو گیا،تاہم ارد گرد کے مکین گھروں سے باہر نکل آئے جسکے باعث کوئی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔بعد ازاں متاثرہ دکانوں کے مالکان مکینوں کے ہمراہ پریس کلب پہنچ گئے اور آتشزدگی سے ہونے والے نقصان کے ازالے کیلئے کمشنر اور ڈپٹی کمشنر لاڑکانہ سمیت مخیر حضرات سے مالی تعاون کی اپیل کی۔ اس موقع پر مالک فراز علی میمن نے بتایا کہ شارٹ سرکٹ کے باعث میری دکان جلی،جس کے نتیجے میں 400 جوڑے، 23 ہزار روپے، 2 کوٹ اور جیکٹس، 4 استریاں، 2 ایل سی ڈی، ایک لیپ ٹاپ، اسپیکر، 4 میز، 15 کمبل، 2 پنکھے، ایک بیٹری اور ایک صوفہ سیٹ مکمل طور پر جل گئے۔ ٹنڈو آدم کے شاہی بازار میں واقع باوانی سینٹر میں اچانک آگ بھڑی اٹھی،جس کے باعث گارمنٹس،سنار سمیت دیگر 6 دکانوں میں موجود لاکھوں روپے مالیت کا سامان جل کر خاکستر ہوگیاجب کہ شہرمیں تجاوزات کی بھرمار کے باعث فائر بریگیڈ ایک گھنٹے کے بعد بھی نہ پہنچ سکی۔ اطلاعات کے مطابق ٹنڈوآدم کے شاہی بازار میں واقع باوانی سینٹر میں گارمنٹس ، کپڑے ، چوڑیوں اور سنار کی دکانوں میں آگ لگنے کی وجہ سے تاجروں محمد انس، فاروق شیخ،فیضان شیخ،ریحان غوری،ریحان شیخ و ویگر کو لاکھوں روپے کے نقصان کا سامنا کرناپڑا ، تاہم فائر بریگیڈ کاعملہ ایک گھنٹہ گزرنے کے باوجود نہیں پہنچ سکا۔ علاوہ ازیں شہریوں نے اسسٹنٹ کمشنر سے مطالبہ کیاہے کہ تجاوزات کے خلاف فوری کارروائی کی جائے۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں