محکمہ جنگلات کی ہزاروں ایکڑ اراضی کی جعل سازی سے الاٹمنٹ

 محکمہ جنگلات کی ہزاروں ایکڑ اراضی کی جعل سازی سے الاٹمنٹ

ٹھری میر واہ(رپورٹ:قلندر بخش بلیدی) ٹھری میر واہ میں محکمہ جنگلات کی ہزاروں ایکڑ اراضی جعل سازی کے ذریعے الاٹ کرنے کاانکشاف ہواہے ۔

تفصیلات کے مطابق خیرپور کی تحصیل ٹھری میر واہ کے پیروسن تھانے کی حدود کے گاؤں اصحابی میں مختار کار کے تپے دار وقار شر کی جانب سے محکمہ جنگلات کی ہزاروں ایکڑ اراضی کی مبینہ طورپر جعلی رجسٹری کے ذریعے الاٹمنٹ کرکے کروڑوں روپے کمانے میں مصروف ہیں ،تاہم غیر قانونی عمل پر ان کے خلاف ڈپٹی کمشنر ،اسسٹنٹ کمشنر ودیگر متعلقہ حکام کی طرف سے کوئی ایکشن نہیں لیاجارہاہے ۔ذرائع کے مطابق ڈیڑھ لاکھ روپے تنخواہ لینے والے ریونیو ڈپارٹمنٹ کے تپیدار وقار شر کو مقامی افسران کی مبینہ سرپرستی حاصل ہے ۔ یاد رہے کہ گاؤں اصحابی کی سرکاری اراضی کے تپیدار نے بااثر شخصیات کو زمینیں الاٹ کی تھیں ، نواز ملاح کو 32 ایکڑ اراضی،اسماعیل کمبوہ کو300 ایکڑ ،لیاقت ڈہینگہ کو 40 ایکڑ ،ریاض کو 300 ایکڑ اور اصغر بھٹو کو محکمہ جنگلات کی 50 ایکڑ اراضی مبینہ طورپر جعلی رجسٹری کے ذریعے الاٹ کی تھی جس کے باعث قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچایاگیا جب کہ سرکاری اراضی سے متعلق عدالتی احکامات موجود ہیں جس کے مطابق یہ ساری زمین حکومت کی ملکیت ہے مگر حکومت کی جانب سے کوئی کارروائی نہیں کی جارہی ہے ۔دوسری جانب علاقے کے سماجی رہنماؤں نے مطالبہ کیاہے کہ وفاق،حکومت سندھ ڈی سی خیرپور ، کمشنر سکھر کو سرکاری اراضی واگزار کرانے کے احکامات جاری کریں ۔ 

 

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں