بلڈ پریشر کے مریضوں کی تلاش کیلئے آگاہی ڈیسک کی تجویز

بلڈ پریشر کے مریضوں کی تلاش کیلئے آگاہی ڈیسک کی تجویز

کراچی(این این آئی)ماہرین صحت نے خبردار کیا ہے کہ پاکستان میں بلڈ پریشر کے لاپتہ مریضوں کو تلاش کرنے کے لیے شاپنگ کے مراکز پر آگاہی ڈیسک قائم کرکے ملک میں بلڈ پریشر کے نوجوان مریضوں کو تلاش کیا جائے بصورت دیگر اس مرض کو روکا نہیں جاسکے گا۔

یہ باتیں انہوں نے ڈاؤ انٹرنیشنل میڈکل کالج اوجھا کیمپس میں ڈاؤ انسٹیٹیویٹ آف کارڈیالوجی کے تحت ’’بلند فشارخون: ایک خاموش قاتل‘‘کے عنوان سے منعقد ہونے والے آگاہی سمپوزیم سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔ سمپوزیم میں ڈائریکٹرڈاؤ انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی ڈاکٹر محمد طارق فرمان، نرسنگ ڈائریکٹر انڈس اسپتال حاکم شاہ،صدر پی ایچ ایل پروفیسر ڈاکٹر نواز لاشاری، ڈائریکٹر سندھ انسٹی ٹیوٹ آ ف کارڈیوویسکولر ڈیزیز ڈاکٹر جاوید اکبر سیال نے خطاب کیا جبکہ ڈائریکٹر نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیو ویسکولرڈیزیز ، ڈاکٹر طاہر صغیر مہمانِ خصوصی تھے ۔ ماہرین نے کہا کہ بلند فشار خون صرف بوڑھوں کا مسئلہ نہیں، بلکہ ہر فرد کو اس کا علم ہونا چاہیے ۔ انہوں نے نوجوانوں کو ہدایت کی کہ وہ سونے سے آدھے گھنٹے قبل موبائل کا استعمال ترک کریں اور 6 سے 8 گھنٹے کی نیند پوری کریں ، اسی طرح وہ اس مرض کا شکار ہونے سے بچ سکتے ہیں۔ تمباکو نوشی ، ویپز کا استعمال بھی 21 سے 25 برس کے نوجوانوں میں ہارٹ اٹیک کی وجہ بن رہا ہے ۔ آج کل لوگ ٹیکنالوجی کی وجہ سے موبائل میں مصروف رہتے ہیں جس کی وجہ سے وہ سماجی طور پر تنہائی کی شکارہورہے ہیں۔

 

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں