نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- وفاقی حکومت سےہمیں 869 ارب روپےملنےہیں،مرادعلی شاہ
  • بریکنگ :- رواں سال وفاق نےہم سے 760 ارب کاوعدہ کیاتھا،مرادعلی شاہ
  • بریکنگ :- وفاق نےرواں سال 613 ارب روپےدیئے،وزیراعلیٰ سندھ
  • بریکنگ :- وفاق نےہمارے 47 ارب روپےدینےہیں،مرادعلی شاہ
  • بریکنگ :- کراچی: بورڈآف ریونیومیں کچھ مسائل کاسامناہے،مرادعلی شاہ
  • بریکنگ :- انڈس اسپتال کوساڑھے 4 ارب روپےدےرہےہیں،مرادعلی شاہ
Coronavirus Updates

یورپی مصورکی 170 سالہ پرانی پینٹنگزقلعے میں آویزاں

یورپی مصورکی 170 سالہ پرانی پینٹنگزقلعے میں آویزاں

دنیا اخبار

پینٹنگز کی بحالی میں آرکیالوجی، والڈ سٹی اور ہنگری کے ماہرین نے حصہ لیا

لاہور(سپیشل رپورٹر)مشہور یورپی مصور آگسٹ شوفیٹ کی 170 سال قدیم پینٹنگز بحالی کے بعد لاہور قلعے میں آویزاں کر دی گئی ہیں۔ ہنگری کے مصور آگسٹ شوفیٹ کی پینٹنگز کی بحالی میں آرکیالوجی، والڈ سٹی اور ہنگری کے ماہرین نے حصہ لیا۔ اس ضمن میں سیکرٹری ٹورازم اینڈ آرکیالوجی ڈیپارٹمنٹ احسان بھٹہ نے بتایا کہ پاکستان میں ہنگری کے سابق سفیر استوین زابو اور انکی اہلیہ نے منصوبے میں دلچسپی لی۔ موجودہ سفیر مسٹر بیلا فازیکاز نے بھی اپنے پیشرو کا مشن جاری رکھا۔ احسان بھٹہ نے کہا کہ ہنگری کا مصور آگسٹ شوفیٹ 1841 میں پنجاب کے حکمران مہاراجہ شیر سنگھ کے دربار میں آیا تھا۔ شوفیٹ نے مہاراجہ رنجیت سنگھ کے جانشین کے لئے کئی شہ پارے تخلیق کئے ۔ بعدازاں آگسٹ شوفیٹ نے یورپ جاکر کئی ہندوستانی شخصیات کے سکیچ بھی بنائے ۔ یہ تمام پینٹگز سکھ شہزادی بامبا سودرلینڈ نے واپس لاہور منگوائیں۔سیکرٹری ٹورازم اینڈ آرکیالوجی احسان بھٹہ نے مزید بتایا کہ شہزادی بامبا مہاراجہ رنجیت سنگھ کی پوتی اور ماڈل ٹاؤن لاہور میں مقیم تھی، اس نے انگریز کرنل سودرلینڈ سے شادی کی۔ حکومت پاکستان نے بعدازاں یہ پینٹگز شہزادی بامبا کے قریبی شخص پیر کریم بخش سے خرید لیں۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں