نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 3582 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 10 لاکھ 43 ہزار 277 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 75 ہزار 373 ہے
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 67 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 23 ہزار 529 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 1355 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 9 لاکھ 44 ہزار 375 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 49 ہزار 798 کوروناٹیسٹ کیےگئے
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں ایک کروڑ 61 لاکھ 58 ہزار 330 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 3398 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 3 لاکھ 58 ہزار 387،سندھ میں 3 لاکھ 87 ہزار 261 کیسز
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 45 ہزار 306،بلوچستان میں 30 ہزار 627 کیس رپورٹ
  • بریکنگ :- اسلام آباد 88 ہزار 344،گلگت بلتستان میں 8 ہزار 318 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 25 ہزار 34 ہوگئی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 7.19 فیصدرہی،این سی اوسی
Coronavirus Updates

یوسی24کے مکینوں کا واسا کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

یوسی24کے مکینوں کا واسا کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

دنیا اخبار

پائپ نہ ڈالنے کی وجہ سے آنے جانے میں شدید دشواری کا سامنا ہے گندے پانی سے گزرنا محال،مسئلہ حل نہ ہوا تو احتجاج وسیع کرینگے ،مظاہرین

ملتان( وقائع نگار خصوصی)یوسی24محلہ اتفاق پورہ نزد 14نمبر چونگی کے مکینوں نے واسا کے خلاف سابق چیئرمین پاکستان بیت المال حاجی اکرم کی قیادت میں احتجاجی مظاہرہ کیاگیا۔تفصیل کے مطابق محلہ اتفاق پورہ کے رہائشیوں نے اویس اکرم،شمس الدین، ملک شوکت، حاجی الیاس، محمد رمضان، علی شیر، عابد، زبیر، خرم شہزاد، رمضان انصاری،محمد عارف، عاطف سمیت دیگر افراد نے چیئرمین پاکستان بیت المال حاجی اکرم کی قیادت میں احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے بتایا کہ علاقے میں عرصہ دراز سے موجود پائپ نہ ڈالنے کی وجہ سے گزربسرکے لئے دشواری کا سامنا پیش آرہا ہے ،نمازی حضرات،بزرگ بچے و خواتین کے لئے گزرنے کے لئے گندے پانی سے گزرناپڑتاہے ڈائریکٹر واسا ناصر اقبال علاقہ کا موقع پروزٹ کریں تو پتاچل سکے کہ علاقہ مکین کس پریشانی سے دوچار ہورہے ہیں،علاقہ میں ہرگلی گندے پانی کی وجہ سے زیر آب ہے جس کے متعلق ادارے کو متعدد بار آگاہ کرچکے ہیں مگر افسوس کے ساتھ کسی کے کانوں پرکوئی جوں تک نہ رینگی اگر انتظامیہ نے اپنی روایت نہ بدلی تو احتجاج کا سلسلہ وسیع کیا جائے گا جس کی ذمہ داری متعلقہ اداروں پر عائد ہوگی۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں