شفا ف بجٹ کیلئے تجاویز کو زیر بحث لانے کی تجویز

شفا ف بجٹ کیلئے تجاویز کو زیر بحث لانے کی تجویز

لودھراں (ڈسٹرکٹ رپورٹر)سی پی ڈی آئی کی جانب سے پاکستان میں بجٹ شفافیت کے صورتحال پر مبنی تیسری سالانہ رپورٹ جاری کردی گئی ،رپورٹ میں وفاقی اور صوبائی سطح پر بجٹ سازی کے عمل میں پائی جانے والی خامیوں کی نشاندہی کی گئی ہے اور مطالبہ کیا گیا ہے کہ بجٹ تجاویز کو وسیع پیمانے پر شہری گروپوں ،سرکاری اداروں اور اہم شراکت داروں کے ساتھ زیر بحث لایا جائے ۔

علاوہ ازیں بجٹ سازی کے عمل میں شہریوں کی شمولیت کو قانونی تحفظ دیا جائے اور سرکاری اداروں کو پابند کیا جائے کہ وہ کے مختلف مراحل کے دوران شہریوں سے مشاورت کریں گے ، بجٹ سازی اور اس پر عمل درآمد کے دوران ممبر اسمبلی کے کردار کو بڑھایا جائے ۔سٹیزن نیٹ ورک فار بجٹ اکاؤنٹیبلٹی کی ممبر تنظیم امن ویلفیئر آرگنائزیشن کے زیر اہتمام صنعت زار لودھراں میں شراکت داروں کے ساتھ بجٹ شفافیت پر ایک مذاکرہ کے دوران سید شہباز حسین نے کہا کہ صوبائی اور وفاقی حکومتی معلومات تک رسائی کے قوانین پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے اور اس کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کیا جائے تاکہ بجٹ شفافیت کو فروغ حاصل ہو۔ 

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں