نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- حکومت اوور سیز پاکستانیوں کیلئے متعدد اقدامات کر رہی ہے،شاہ محمود قریشی
  • بریکنگ :- منامہ:پاکستان کا مستقبل روشن ہے،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی
  • بریکنگ :- وزیر اعظم کی مشاورت سےخارجہ پالیسی میں بنیادی تبدیلی کر دی ہے،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- اوورسیز پاکستانیوں کو الیکٹرانک ووٹنگ کےذریعےووٹنگ کا حق دینا چاہتے ہیں،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- اوورسیز پاکستانیوں کی مشکلات کےخاتمے کیلئے وزیراعظم سٹیزن پورٹل بنایا،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- پاکستان کی دفاعی صلاحیت کی بدولت بیرونی خطرہ نہیں ہے،شاہ محمود قریشی
  • بریکنگ :- بھارت سمیت خطےکےتمام ممالک سےپرامن تعلقات چاہتے ہیں،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- آر ایس ایس کا نظریہ خطے میں امن کی راہ میں رکاوٹ ہے،شاہ محمود قریشی
  • بریکنگ :- منامہ:وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا بحرین میں مقیم پاکستانی کمیونٹی سے خطاب
  • بریکنگ :- بیرون ملک مقیم پاکستانی دنیا بھر میں پاکستان کے نمائندے ہیں ،شاہ محمود قریشی
  • بریکنگ :- حکومت بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو قیمتی اثاثہ سمجھتی ہے،شاہ محمود قریشی
  • بریکنگ :- منامہ:کورونا وبا کی وجہ سے لوگ بیروزگار ہوئے،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- منامہ:معاشی سفارتکاری ہمارا اولین مقصد ہونا چاہیے،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- معاشی استحکام کے بغیر خارجہ پالیسی کے اہداف حاصل نہیں کیے جا سکتے،وزیر خارجہ
  • بریکنگ :- تحریک انصاف کیلئے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں نے تاریخی کردار ادا کیا،وزیر خارجہ
Coronavirus Updates

ٹماٹر، ادرک، لہسن دیگر مصالحہ جات مہنگے

ٹماٹر، ادرک، لہسن دیگر مصالحہ جات مہنگے

دنیا اخبار

عید کی آمد اور موسلادھار بارش کو جواز بنا کر عید سے ایک روز قبل مہنگائی کا طوفان،سبزیاں منڈی نہ پہنچ سکیں،ٹماٹر200،ادرک 600،لہسن 240،ہری مرچ 200روپے کلو فروخت

سرگودھا(نامہ نگار ) عید کی آمد اور موسلادھار بارش کو جواز بنا کر عید سے ایک روز قبل گوشت کی تیاری میں استعمال ہونیوا لے مصالحہ جات کے نرخ 100فیصد تک بڑھا دیئے گئے ،تفصیل کے مطابق منگل کی صبح ہونیوالی موسلادھار بارش کے باعث سبزیوں کی بھاری مقدار منڈی میں نہ پہنچ سکی، اور تاخیر سے پہنچنے پر نیلامیوں کا عمل بھی متاثر ہوا، جن میں ضلعی افسران بھی شریک نہ ہوئے اور سرکاری نگرانی نہ ہونے سے مڈل مین کا ہی راج دکھائی دیا،ٹماٹر 200،ادر ک 600،ہری مرچ200روپے ،لیموں 180روپے ، لہسن 240،دھنیا 200 روپے ،کھیرے 200روپے فی کلو فروخت ہوتا رہا،یہی نہیں کسی بھی علاقے میں فروخت ہونیوالی اشیاء کے نرخ مختلف تھے یہاں یہ امر باعث تشویش ہے کہ چھٹی کے باعث سرکاری نرخ ناموں پر ایک روز قبل والے ریٹ ظاہر کر کے فہرستیں ڈپٹی کمشنر ،ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کمشنرزسمیت دیگر متعلقہ ضلعی افسران کو بھجوا دی گئیں،جس میں سب اچھا کی رپورٹ دے کر افسران بالا کو مطمئن کیا گیا جبکہ صورتحال اس کے برعکس رہی ، ایک ہی رات میں مڈل مین نے مارکیٹ کمیٹیوں کی ملی بھگت سے ریجن بھر میں ناجائز طور پر بھاری منافع کمایا جبکہ پرائس کنٹرو ل کمیٹیاں مکمل طور پر غیر فعال رہیں،شہریوں کا کہنا تھا کہ مطلوبہ مقدار نہ سہی کچھ نہ کچھ تو لینا ہی ہے مگر حسب سابق حکو متی رٹ یہاں بھی نظر نہیں آ رہی ۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں