نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- احتیاطی تدابیرپر 31 جنوری تک عملدرآمدجاری رکھنےکافیصلہ
  • بریکنگ :- 10 فیصدسےکم شرح والےشہروں میں ان ڈورتقریبات میں 300 افرادشرکت کرسکیں گے
  • بریکنگ :- 10 فیصدسےزائدشرح والےشہروں میں ان ڈورتقریبات پرمکمل پابندی
  • بریکنگ :- 10فیصدسےزائدشرح والےشہروں میں اجتماعات پرپابندی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- اسلام آباد:اسدعمرکی صدارت میں این سی اوسی کااجلاس
  • بریکنگ :- اسلام آباد:کوروناصورتحال،احتیاطی تدابیرپرعملدرآمدکاجائزہ
  • بریکنگ :- شادی ہالزسےمتعلق احتیاطی تدابیر 15 فروری تک برقراررکھنےکافیصلہ
  • بریکنگ :- این سی اوسی 27 جنوری کواجلاس میں صورتحال کاجائزہ لےگا
  • بریکنگ :- 10 فیصدسےکم شرح والےشہروں میں آؤٹ ڈورتقریبات میں 500 افرادشرکت کرسکتےہیں
  • بریکنگ :- 10فیصدسےزائدشرح والےشہروں میں ان ڈورڈائننگ پربھی پابندی عائد
  • بریکنگ :- 10فیصدسےزائدشرح والےشہروں میں تعلیمی سرگرمیاں محدود،این سی اوسی
  • بریکنگ :- 12سال سےکم عمرطلبانصف حاضری کیساتھ ہفتےمیں 3 روزآئیں گے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- 12سال سےزائدعمرکےطلباکی مکمل حاضری ہوگی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- اسلام آباد:12سال سےزائدعمرطلباکیلئےویکسی نیشن لازمی قرار
  • بریکنگ :- ان ڈورجمزکو 50فیصدگنجائش کیساتھ کام کرنےکی اجازت،این سی اوسی
  • بریکنگ :- سینما،مزارات،پارکس میں 50فیصدافرادکوداخلےکی اجازت،این سی اوسی
  • بریکنگ :- 10فیصدسےزائدشرح والےشہروں میں کھیل کی سرگرمیوں پرپابندی ہوگی
  • بریکنگ :- پبلک ٹرانسپورٹ کو 70فیصدگنجائش کےساتھ چلانےکی ہدایت،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کاروباری اوقات کارمیں تبدیلی نہیں کی گئی،این سی اوسی
Coronavirus Updates

55 شمالی کے سرکاری سکول میں کلاس روم کم،بچے پریشان

 55 شمالی کے سرکاری سکول میں کلاس روم کم،بچے پریشان

سرگودھا(نامہ نگار ) گورنمنٹ بوائز انگلش میڈیم ہائی سکول 55 شمالی میں کمروں کی کمی کے باعث شدید موسم کی وجہ سے بچوں کے ساتھ ساتھ سکول انتظامیہ کو بھی شدید مشکلات ہیں، تفصیل کے مطاب سکول ہذا ایجوکیشن حکام اور ضلعی انتظامیہ کی عدم توجہی کے باعث شدید مشکلات کا شکار ہے ۔

جس میں بچوں کی تعداد کے مطابق کمرے دستیاب نہیں جس کی وجہ سے بیشتر بچے کھلے آسمان تلے تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہیں، سکول انتظامیہ کے مطابق فوری طو ر پر تین کمروں کی ضرورت ہے جن کی تعمیر کیلئے ایجوکیشن حکام کو متعدد مرتبہ لکھا جا چکا ہے جس پر پیش رفت کا انتظار ہے جبکہ بچوں اور ان کے والدین نے ارباب اختیار سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں