آئندہ ماہ سے مردم شماری ،اساتذہ کی ڈیوٹیاں،طلبہ پریشان

آئندہ ماہ سے مردم شماری ،اساتذہ کی ڈیوٹیاں،طلبہ پریشان

سرگودھا(نامہ نگار ) آئندہ ماہ سے مردم شماری کے آغاز اور تربیت کے جاری عمل نے لاکھوں طلباء و طالبات کا مستقبل داؤ پر لگا دیا، ان کے ساتھ ساتھ والدین میں بھی شدید اضطراب کی لہر دوڑ گئی۔

تفصیل کے مطابق تعلیمی سال کی آخری سہ ماہی گزر رہی ہے ،اور تمام سال پڑھائی کے بعد ان دنوں تعلیمی سرگرمیاں اپنے عروج پر پہنچ چکی ہیں ، اور مارچ میں سالانہ امتحانات کی تیاری کیلئے بھی یہ دن اہم ہیں، دوسری جانب حکومتی ہدایت پر مردم شماری کیلئے اساتذہ کی خدمات حاصل کرنے کی وجہ سے طلباء و طالبات کی ایک بڑی تعداد کو شدید مشکلات کا سامنا پڑے گا جس کا آغاز مردم شماری کا تربیتی عمل شروع ہوتے ہی ہو گیا ہے ،محمد وسیم اکرم خان، شاہد اقبال، حاجی الطاف، ملک غفور و دیگر کا کہنا ہے کہ طالبعلموں کا تعلیمی سلسلہ عروج پر ہے ، ان حالات میں مردم شماری کا انعقاد غیر دانشمندانہ فیصلہ ہے ، اس سے سکول اساتذہ سے خالی ہو جائیں گے اور طالبعلموں کی پڑھائی کا سلسلہ شدید طور پر متاثر ہو گا، اس لیے ہم ارباب اختیار سے استدعا کرتے ہیں کہ مردم شماری کا انعقاد فی الفور موخر کیا جائے ۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں