ماڈل ٹائون ہائوسنگ سکیم کونجی شعبہ کے اشتراک سے آباد کرنیکا منصوبہ بھی ٹھپ ہوگیا

ماڈل ٹائون ہائوسنگ سکیم کونجی شعبہ کے اشتراک سے آباد کرنیکا منصوبہ بھی ٹھپ ہوگیا

سرگودھا(سٹاف رپورٹر )بدعنوانیوں کی نذر ہو کر فلاپ ہونیوالی ہاؤسنگ سکیم ماڈل ٹاؤن کو پرائیویٹ سیکٹر کے اشتراک سے آباد کرنے کیلئے اقدامات بھی سیاسی عدم استحکام اور متعلقہ اداروں کی کوارڈی نیشن نہ ہونے کی وجہ سے ٹھپ ہو گئے۔

 امپروومنٹ ٹرسٹ کے زیر اہتمام لاہور روڈ پر تیس سال قبل ماڈل ٹاؤن کا منصوبہ شروع کیا گیا تھا اس ضمن میں پلاٹوں کی الاٹمنٹ بھی کی گئی، مگر یہ ہاؤسنگ سکیم مناسب ڈویلپمنٹ نہ ہونے اور مبینہ کرپشن کی وجہ سے ابھی تک ویران پڑی ہے ، جبکہ مختصر ترقیاتی کام بھی ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو چکے ہیں، موجودہ ضلعی انتظامیہ نے اس ہاؤسنگ منصوبے کو کامیاب بنانے کیلئے پرائیویٹ سیکٹر کے تعاون سے اقدامات کا فیصلہ کیا تھا ،ابتدائی طور پر ہاؤسنگ سکیم کو مثالی بنانے کیلئے ایک ارب روپے کا تخمینہ لگاتے ہوئے خالی پلاٹ نیلام کرنے کا پروگرام بھی ترتیب دیا ،اس سلسلہ میں ایس ڈی اے کے سیاسی چیئرمین کی جانب سے بھی بہت کوشش کی گئی مگر مختلف رکاوٹوں اور پلاٹوں کی ایک سے زائد ناموں پر الاٹمنٹ سمیت دیگر امور کے باعث یہ پروگرام ملتوی کر دیا گیا۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں