نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- وزیراعظم کی زیرصدارت حکومتی ترجمانوں کےاجلاس کی اندرونی کہانی
  • بریکنگ :- وزیراعظم نےمعاشی ترقی کی گروتھ 5.37 فیصدتک جانےسےآگاہ کیا
  • بریکنگ :- کوروناکےباوجودمعاشی ترقی کا5.37 فیصدہونا بڑی کامیابی ہے، وزیراعظم
  • بریکنگ :- اجلاس میں اکانومسٹ اوربلوم برگ کی تازہ رپورٹس پیش
  • بریکنگ :- اسلام آباد ہائیکورٹ میں رانا شمیم کیس پر بریفنگ
  • بریکنگ :- مخصوص مافیاعدلیہ کودباؤمیں لانےکی کوشش میں ہے،وزیراعظم
Coronavirus Updates

میشاشفیع کیخلاف ہتک عزت کے دعوے میں گواہ صبا حمید کے بیان پر جرح مکمل

تفریح

لاہور: (دنیا نیوز)لاہور کی سیشن عدالت نے میشاشفیع کے خلاف ہتک عزت کے دعوے میں گواہ صبا حمید کے بیان پر جرح مکمل کرلی، اداکارہ نے بیان میں دعویٰ کیا کہ انہوں نے بہت سی ایسی خواتین سے ملاقات کی ہے جنہیں علی ظفر نے ہراساں کیا ہے ۔

ایڈیشنل سیشن جج خان محمود نے کیس کی سماعت کی ،دوران سماعت میشا شفیع کی گواہ ادکارہ صبا حمید بیان پر جرح مکمل کرانے کےلیے پیش ہوئیں۔

وکیل کے سوال پر صبا حمید نے بتایا کہ اس بات میں کوئی سچائی نہیں کہ میشا شفیع بچپن میں ذہنی دباؤ کا شکار تھیں تاہم کم عمری میں نانی کو آئی سی یو میں دیکھ کر سکتے میں چلی گئیں تھیں۔

وکیل کے سوال پر ادکارہ صبا حمید نے بتایا کہ انہیں یقین ہے کہ انکی بیٹی سچ بول رہی ہے ،،اداکارہ صبا حمید نے بیان دیا کہ یہ حقیقت ہے کہ خواتین جنسی ہراسانی سے متعلق آپس تو بات کرتی ہیں لیکن معاشرے سے راز رکھنا چاہتی ہیں عدالت نے صبا حمید کے بیان پر جرح مکمل ہونے پر آئندہ سماعت پر میشا شفیع کے مزید گواہوں کو طلب کرتے ہوئے کارروائی ،16دسمبر تک ملتوی کردی۔

ادھر گلوکار علی ظفر کے خلاف سوشل میڈیا پر جنسی ہراسانی کے الزامات لگانے کے مقدمے میں میشا شفیع اچانک ضلع کچہری پیش ہوگئیں اور وکلا کے زریعے حاضری لگوائی۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں