نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- کشمیریوں کےماورائےعدالت قتل کی کارروائیوں میں اضافہ ہوا،ترجمان
  • بریکنگ :- رواں سال بھارتی فوج نے 55سےزائدکشمیریوں کوشہیدکیا،ترجمان دفترخارجہ
  • بریکنگ :- کسی بھی طرح کاتشددکشمیریوں کےجذبہ حق خودارادیت کودبانہیں سکتا،ترجمان
  • بریکنگ :- کشمیریوں کےماورائےعدالت قتل کی آزادانہ تحقیقات کامطالبہ کرتےہیں،ترجمان
  • بریکنگ :- پاکستان کی مقبوضہ کشمیرمیں مزید 3کشمیریوں کےقتل کی مذمت
Coronavirus Updates

جانبداری کا الزام، ڈپٹی سپیکر قاسم سوری کیخلاف تحریک عدم اعتماد جمع

پاکستان

اسلام آباد: (دنیا نیوز) اپوزیشن نے ڈپٹی سپیکر قاسم سوری کے خلاف تحریک عدم اعتماد جمع کروا دی ہے۔ اس کے متن میں کہا گیا ہے کہ ڈپٹی سپیکر نے کئی بار جانبداری کا مظاہرہ کیا، انہوں نے کہا وہ آئین کو نہیں مانتے، ایسے شخص کا کوئی حق نہیں وہ اس سیٹ پر بیٹھے۔

تفصیل کے مطابق مسلم لیگ (ن) اور دیگر اپوزیشن نے ڈپٹی سپیکر اسمبلی قاسم سوری کے خلاف تحریک عدم اعتماد جمع کروا دی ہے۔ عدم اعتماد کی تحریک جاوید عباسی اور خرم دستگیر نے جمع کروائی۔

تحریک عدم اعتماد پر مسلم لیگ (ن)، پیپلز پارٹی، ایم ایم اے، بی این پی اور محسن داوڑ عوامی نیشنل پارٹی سمیت تمام جماعتوں کے نمائندہ کے دستخط شامل ہیں۔

مسلم لیگ (ن) کے مرتضیٰ جاوید عباسی نے تحریک جمع کرانے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کی متفقہ تحریک جمع کروائی ہے۔ ڈپٹی سپیکر نے کئی بار جانبداری کا مظاہرہ کیا۔ آج ریکارڈ پر انہوں نے کہا میں آئین کو نہیں مانتا۔

مرتضیٰ جاوید عباسی نے کہا ہم جمہوری طریقے سے آئین کے مطابق کام کریں گے۔ ایک ایسا شخص جو نو ماہ سے سٹے کے پر ڈپٹی سپیکر کی سیٹ پر بیٹھا ہے، وہ شخص آئین اور قانون کی پاسداری نہیں کر رہا۔ ایسے شخص کا کوئی حق نہیں وہ اس سیٹ پر بیٹھے۔

صحافی کے سوال پر کہ اگلا ڈپٹی سپیکر کا امیدوار کون ہوگا؟ انہوں نے کہا یہ فیصلہ مشاورت سے ہوگا کہ اگلا ڈپٹی سپیکر کا امیدوار کون ہوگا۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں