نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- شہبازشریف کی زیرصدارت اعلیٰ سطح اجلاس
  • بریکنگ :- مسلم لیگ(ن)نےمہنگائی کیخلاف احتجاجی پروگرام تشکیل دےدیا
  • بریکنگ :- ملک گیراحتجاج کیلئےریلیوں، جلوسوں کےپروگرام کوحتمی شکل دےدی
  • بریکنگ :- آج سے ملک بھرمیں احتجاج کا آغاز کرنےکافیصلہ
  • بریکنگ :- پہلااحتجاجی مظاہرہ راولپنڈی میں ہوگا،اجلاس میں فیصلہ
Coronavirus Updates

بیٹے کی پیدائش قبل ازوقت، آئی سی یو میں زیرعلاج ہے: بختاور بھٹو

پاکستان

لاہور: (ویب ڈیسک) سابق صدر آصف علی زرداری اور سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کی بڑی صاحبزادی بختاور بھٹو نے کہاہے کہ بیٹے کی آمد 8 نومبر کو متوقع تھی لیکن اس نے 10 اکتوبر کو دنیا میں آکر ہم سب کو حیران کردیاہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں انہوں نے بتایاکہ ان کے ہاں بیٹے کی پیدائش وقت سے تقریبا ایک ماہ پہلے ہوئی ہے جس کے باعث نومولود کو طبی مسائل کے پیشِ نظر بچوں کے انتہائی نگہداشت یونٹ میں رکھا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کی صاحبزادی بختاور کے ہاں بیٹے کی پیدائش

بختاور بھٹو نے کہا کہ بیٹے کی پیدائش پر آپ سب کی محبتوں اور چاہتوں کا شکریہ۔

انہوں نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ بیٹا فی الحال این آئی سی یو میں ہے لیکن رو بہ صحت ہے، اسے اپنی دعاﺅں میں یاد رکھیں۔

یاد رہے کہ  سابق وزیراعظم محترمہ بینظیر بھٹو اور سابق صدر آصف علی زرداری کی بڑی صاحبزادی بختاور بھٹو زرداری کے ہاں 11 اکتوبر کو بیٹے کی ولادت ہوئی تھی۔

سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کی بڑی صاحبزادی بختاور بھٹو نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ ہمیں اس بات کی خوشی ہے کہ ہمارے ہاں بیٹے کی پیدائش ہوئی ہے۔

دوسری طرف پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے ٹویٹر پر لکھا کہ میں آفیشلی ماموں بن گیا ہوں۔

اُدھر سابق صدر آصف زرداری کی چھوٹی صاحبزادی آصفہ بھٹو نے بھی ٹویٹر پر لکھا کہ میں آفیشلی خالہ بن گئی ہوں۔ الحمد للہ

یاد رہے کہ سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کی بڑی صاحبزادی 31 سالہ بختاور بھٹو زرداری 29 جنوری کو بلاول ہاؤس کراچی میں پاکستانی نژاد دبئی کے صنعت کار محمود چودھری کے ساتھ شادی کے بندھن میں بندھ گئی تھیں۔

نکاح کی تقریب میں بھٹو و زرداری خاندان اور محمود چودھری کے رشتے دار شریک ہوئے، اس موقع پر بلاول ہاؤس میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے ان کی شادی کی تقریبات 4 دن قبل 25 جنوری سے ان کی 31 ویں سالگرہ کے موقع پر شروع ہوئی تھیں اور تقریبات کا آغاز محفل میلاد سے کیا گیا تھا۔

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں