نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- عدالتی حکم پرکل سےموٹروےایم 2پرایم ٹیگ کےبغیرگاڑیوں کےداخلےپرپابندی
  • بریکنگ :- راوی ٹال پلازہ سےجوائن ہونےوالی تمام موٹرویزپرایم ٹیگ کااطلاق ہوگا،آئی جی
  • بریکنگ :- محفوظ سفراورماحولیاتی آلودگی کم کرنےمیں شہری تعاون کریں،آئی جی موٹروےپولیس
Coronavirus Updates

وزیراعظم عمران خان کی مسجد نبوی میں روضہ رسول ﷺ پر حاضری

پاکستان

ریاض: (دنیا نیوز) سعودی عرب کے تین روزہ دورے پر وزیراعظم عمران خان مدینہ پہنچ گئے۔ انہوں نے مسجد نبوی میں روضہ رسول ﷺ پر حاضری بھی دی۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان اپنے تین روزہ دورہ سعودی عرب کے موقع پر مدینہ منورہ پہنچ گئے، مدینہ کے نائب گورنر شہزادہ سعود بن خالد الفیصل نے وزیراعظم عمران خان کا شاندار ا ستقبال کیا۔ وزیر اعظم مسجد نبوی میں روضہ رسول ﷺ پر حاضری دیں گے۔

مدینہ پہنچنے کے بعد وزیراعظم جب جہاز سے باہر آئے تو وہ جوتوں کے بغیر ننگے پیر تھے۔

وزیراعظم کے وفد میں وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر توانائی حماد اظہر اور معاون خصوصی برائے ماحولیاتی تبدیلی ملک امین اسلم شامل ہیں۔

دوسری طرف وزیراعظم عمران خان نے وزیراعظم نے مسجد نبوی میں روضہ رسول ﷺ پر حاضری بھی دی۔

وزیراعظم عمران خان نے مسجد نبوی میں نوافل ادا کئے اور امت مسلمہ کے اتحاد، ملکی سلامتی، ترقی اور خوشحالی کی دعا کی۔

وزیرخارجہ شاہ محموس قریشی، وزیر توانائی حماداظہرنے بھی روضہ رسول ﷺ پر حاضری دی، گورنر سندھ عمران اسماعیل نے بھی روضہ رسول ﷺ پر حاضری دی۔

وزیراعظم عمران خان کے لیے خانہ کعبہ کا خصوصی طور پر دروازہ کھولا جائے گا۔ جدہ پہنچنے پر مکہ کے نائب گورنر شہزادہ بدر بن سلطان السعود نے وزیر اعظم کا استقبال کیا۔وزیراعظم آج مکہ مکرمہ میں ہی قیام کریں گے۔

قبل ازیں پاکستان کے وزرات خارجہ سے جاری اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ وزیراعظم 23 اکتوبر سے 25 اکتوبر کے دورے کے دوران ریاض میں ہونے والی ’مڈل ایسٹ گرین اینی شیئٹیو‘ سربراہی کانفرنس میں شرکت کریں گے۔

سربراہی کانفرنس کے دوران وزیراعظم ماحولیاتی تبدیلی کی وجہ سے ترقی پذیر ممالک کو درپیش چینلجز پر اپنا نکتہ نظر بیان کریں گے۔ وزیراعظم اس موقع پر ماحولیاتی چیلنجز سے نمٹنے کے لیے قدرتی طریقوں پر مبنی پاکستانی تجربات پر بھی روشنی ڈالیں گے۔

ایم جی آئی سربراہی کانفرنس سعودی ولی عہد اور وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان کی ایما پر منعقد کی جا رہی ہے۔ یہ مشرق وسطی میں اپنی نوعیت کی پہلی ایسی کانفرنس ہے۔

یاد رہے کہ اس سال مارچ میں سعودی ولی عہد نے گرین سعودی عرب اور گرین مڈل ایسٹ کے نام سے منصوبے شروع کیے تھے۔ ان کا مقصد کرہ ارض اور قدرتی حیات کا تحفظ ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے ایسے اقدامات کا خیر مقدم کرتے ہوئے پیش کش کی تھی کہ اس سلسلے میں پاکستان کلین اینڈ گرین پاکستان اور ٹین بلین ٹری سونامی جیسے منصوبوں کا تجربہ بھی شیئر کر سکتا ہے۔

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں