نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- لائنزایریاری ڈویلپمنٹ پروجیکٹ میں 227 سےزائدپلاٹوں کی چائناکٹنگ
  • بریکنگ :- کراچی:کےڈی اےافسران کی سزاکیخلاف اپیلیں مسترد
  • بریکنگ :- عدالت نےسابق ڈائریکٹرلینڈسمیت 6 ملزمان کی اپیلیں مستردکیں
  • بریکنگ :- عدالت نےملزمان کودی گئی 7 سال سزاکوکم کرکے 5 سال کردیا
  • بریکنگ :- کراچی:ملزمان کیخلاف ٹھوس شواہدموجودہیں،نیب پراسیکیوٹر
  • بریکنگ :- کراچی:ملزمان نےقومی خزانےکواربوں روپےکانقصان پہنچایا،نیب
  • بریکنگ :- ملزمان پرپروجیکٹ میں 227 پلاٹوں کی چائناکٹنگ کاالزام تھا،نیب
  • بریکنگ :- سندھ ہائیکورٹ،فاطمہ جناح کالونی میں غیرقانونی تعمیرات کاکیس
  • بریکنگ :- عدالت کافاطمہ جناح کالونی میں پورشنزپرکام فوری روکنےکاحکم
  • بریکنگ :- ڈی جی ایس بی سی اے،ایڈووکیٹ جنرل سندھ کونوٹسزجاری
  • بریکنگ :- عدالت نےآئندہ سماعت پرمتعلقہ اداروں سےرپورٹ طلب کرلی
Coronavirus Updates

الیکٹرانک ووٹنگ مشین قانون سازی اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج

پاکستان

اسلام آباد: (دنیا نیوز) الیکٹرانک ووٹنگ مشین قانون سازی کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا گیا۔ چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ اطہر من اللہ نے شہری کی درخواست نامکمل قرار دے دی۔

درخواست گزار نے موقف اپنایا کہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین دھاندلی کی منصوبہ بندی، قانون سازی کالعدم قرار دی جائے۔ جس پر چیف جسٹس اطہر من اللہ نے استفسار کیا آپ کو الیکٹرانک ووٹنگ مشین کی قانون سازی کی کن شقوں پر اعتراض ہے ؟ الیکٹرانک ووٹنگ مشین قانون سازی کی کون سی شقیں آئین سے متصادم ہیں؟ ایسے نامکمل درخواست دائر نہیں کرتے ورنہ جرمانہ ہوجاتا ہے۔

درخواست گزار نے عدالت سے استدعا کی کہ درخواست کی درستگی کے لیے مہلت دی جائے۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے شہری کی مہلت کی استدعا منظور کرلی۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں