2019ء میں پاکستان اور بھارت جوہری جنگ کے قریب تھے: پومپیو کا انکشاف

نیویارک : ( دنیا نیوز ) سابق امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا کہ 2019 ء کے پلوامہ حملے کے بعد پاکستان اور بھارت ایک دوسرے پر ایٹمی حملہ کرنے کیلئے تیار تھے لیکن امریکا نے مداخلت کرکے جنگ کو روکا۔

مائیک پومپیو نے اپنی کتاب ’’ Never Give an Inch: Fighting for the America I Love ‘‘ میں انکشاف کیا کہ پلوامہ حملے کے بعد بھارت اور پاکستان نے ایک دوسرے کو دھمکیاں دینا شروع کر دیں تھیں، ہندوستانی اور پاکستانی حکام کو خدشہ تھا کہ دوسرا فریق اُن پر جوہری حملہ کرنے کیلئے تیاری کر رہا ہے۔

سابق وزیر خارجہ اپنی کتاب میں لکھتے ہیں کہ انہیں صورتحال کی سنگینی کا علم دورہ ویتنام پر ہوا، انھوں نے اس وقت کے امریکی قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن اور دیگر حکام کے ساتھ ملکر دونوں ممالک کے درمیان جاری کشیدگی کو کم کرنے میں کردار ادا کیا۔

انہوں نے اپنی کتاب میں لکھا کہ ایک سینئر بھارتی اہلکار کی فوری فون کال پر میں نیند سے جاگا، بھارتی اہلکار کا خیال تھا کہ پاکستان نے جوہری حملے کی تیاری شروع کی ہے، اس نےکہا کہ بھارت پیش قدمی پر غور کر رہا ہے، جس پر میں نےکہا کہ آپ کچھ نہ کریں،ہمیں چیزوں کو سلجھانے کے لیے وقت دیں۔

انہوں نے لکھا کہ امریکی سفارتکاروں نے پاکستان اور بھارت دونوں کو قائل کیا کہ جوہری جنگ کی طرف نہ جائیں، اس رات ایک ہولناک نتیجے سے بچنے کے لیے جو ہم نے کیا وہ کوئی قوم نہیں کرسکتی تھی۔ 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں