نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- بلوچستان اسمبلی جمعرات کو نئےقائدایوان کاانتخاب کرےگی
  • بریکنگ :- جان جمالی اورصالح بھوتانی اسپیکربلوچستان اسمبلی کیلئےمضبوط امیدوار
  • بریکنگ :- نئی حکومت میں ظہوربلیدی ایک بارپھرمالیاتی امورسنبھالیں گے
  • بریکنگ :- بلوچستان کےناراض ارکان کوکابینہ کاحصہ بنایاجائےگا،ذرائع
  • بریکنگ :- اسپیکرعبدالقدوس بزنجووزیراعلیٰ بلوچستان کیلئےمضبوط امیدواربن گئے
  • بریکنگ :- عبدالقدوس بزنجوکواتحادی جماعتوں کےعلاوہ اپوزیشن ارکان کی بھی حمایت حاصل
Coronavirus Updates

خیبرپختونخوا میں سزاؤں کا تعین اور ان میں کمی سے متعلق قانون سازی کرلی گئی

پاکستان

پشاور: (دنیا نیوز) خیبرپختونخوا میں سزاؤں کا تعین اور ان میں کمی سے متعلق قانون سازی کرلی گئی۔ سزائیں دینے کے لیے حکومت قواعد و ضوابط ترتیب دے گی۔ قانون کا اطلاق ماتحت عدالت کی جانب سے دی جانیوالی سزاؤں پر ہوگا۔

صوبے میں سینٹینسنگ بل 2021 منظور کرلیا گیا، جس کے تحت سزاؤں کو سنائے جانے کے موقع پر مجرم کی عمر، برتاؤ اور دیگر امور کو مد نظر رکھا جائیگا۔ شدت پسندی، ریاست کے خلاف سرگرمیاں، مذہبی منافرت پھیلانے سمیت دیگر سنگین جرائم کی پاداش میں ملزمان کو سزائیں دینے کے لیے حکومتی قواعد و ضوابط پر عملدرآمد لازمی ہوگا۔ معاون خصوصی کامران بنگش نے کہا ہے کہ اقدام سے عدالتوں پر بوجھ کم ہوگا۔

بل کے تحت ماتحت عدلیہ کو بھی پابند بنایا جائیگا کہ حکومت کی جانب سے مرتب کردہ ہدایت پرعملدرآمد کرے۔ ایک کونسل کا قیام بھی عمل میں لایا جائیگا جو سزاؤں سے متعلق قوانین پر عملدرآمد اور عوام میں آگاہی پیدا کرے گی۔ قانونی ماہرین نے بھی نئے قانون سے متعلق ملے جلے رد عمل کا اظہار کیا۔

قانون کے ذریعے 6 ماہ سے 25 سال قید کے حوالے سے 4 زونز بنائے ہیں اور ہر ایک کے حوالے سے الگ الگ گائیڈ لائنز مرتب کی جائینگی۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں