نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکےمزید 1780 کیس رپورٹ،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کورونامریضوں کی تعداد 12 لاکھ 38 ہزار 668 ہوگئی
  • بریکنگ :- ملک میں کوروناکےایکٹوکیسزکی تعداد 50 ہزار 690 ہے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں 24 گھنٹےکےدوران کوروناسےمزید 42 اموات
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں کوروناسےجاں بحق افرادکی تعداد 27 ہزار 566 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےمیں کوروناکے 3090 مریض صحت یاب،این سی اوسی
  • بریکنگ :- کوروناسےصحت یاب افرادکی مجموعی تعداد 11 لاکھ 60 ہزار 412 ہوگئی
  • بریکنگ :- 24 گھنٹےکےدوران 44 ہزار 712 کوروناٹیسٹ کیےگئے،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک بھرمیں ایک کروڑ 91 لاکھ 91 ہزار 787 کوروناٹیسٹ کیےجاچکے
  • بریکنگ :- کوروناسےمتاثر 4199 مریضوں کی حالت تشویشناک،این سی اوسی
  • بریکنگ :- ملک میں کورونامثبت کیسزکی شرح 3.98 فیصدرہی،این سی اوسی
  • بریکنگ :- پنجاب 4 لاکھ 28 ہزار 394،سندھ میں 4 لاکھ 55 ہزار 65 کیسز،این سی اوسی
  • بریکنگ :- خیبرپختونخواایک لاکھ 73 ہزار 23،بلوچستان میں 32 ہزار 849 کیس رپورٹ
  • بریکنگ :- اسلام آبادایک لاکھ 5 ہزار 21،گلگت بلتستان میں 10 ہزار 296 کیسز
  • بریکنگ :- آزادکشمیرمیں کورونامریضوں کی تعداد 34 ہزار 20 ہوگئی،این سی اوسی
Coronavirus Updates

امریکی فضائی حملوں میں سات افغان طالبان ہلاک، لشکرگاہ میں حکومتی فورسز کی پوزیشن کمزور

دنیا

کابل: (دنیا نیوز) افغانستان میں امریکی فضائی حملوں میں سات طالبان مارے گئے، لشکرگاہ میں افغان فورسز کی پوزیشن کمزور ہے۔ افغانستان میں خانہ جنگی تیز ہونے کے بعد یورپ پر افغان مہاجرین کا دباؤ بڑھنے لگا۔

افغانستان کے شہر ہرات، قندھار اورلشکر گاہ میں شدید لڑائی جاری ہے۔ افغان فورسز کے مطابق لشکر گاہ میں امریکی فضائی حملوں میں سات طالبان مارے گئے ہیں۔ مقامی حکام کےمطابق افغان فورسز کی لشکر گاہ میں پوزیشن کمزور ہے، طالبان نے صوبے ہلمند کے دس میں سے نو اضلاع پر قبضہ کر لیا۔ ہرات اورقندھار میں بھی لڑائی جاری ہے۔

افغانستان میں بڑھتی بے امنی کےباعث افغان مہاجرین کا یورپ کی طرف دباؤ بڑھ رہا ہے، امریکا نے خطرے کے شکار افغانوں کے انخلا کے پروگرام کا دائرہ کار بڑھانےکا فیصلہ کیا ہے جس سے مزید کئی ہزار افغان باشندوں کو امریکہ میں مستقل رہائش مل سکے گی۔

ادھر امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے کہا ہے کہ پاکستان نے افغان طالبان کو مذاکرات کےلیے آمادہ کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ امریکا کو جس نتیجے کی تلاش ہے،پاکستان اس میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے، افغان امن عمل کے لیے پاکستان اورامریکا کے قریبی رابطے ہیں، دونوں ممالک مل کر کام جاری رکھیں گے۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں