نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- دیسی ساختہ سرنگیں بنانےکاسامان بھی برآمد،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- سکیورٹی فورسزکاجنوبی وزیرستان کےعلاقےسروکئی میں آپریشن،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- آپریشن کےدوران دہشتگردوں کےٹھکانےسےاسلحہ اوربارودبرآمد،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- سب مشین گن،آرپی جی 7،دستی بم اورمختلف قسم کااسلحہ برآمد،آئی ایس پی آر
Coronavirus Updates

الیکشن میں حصہ لینے کا ابھی فیصلہ نہیں کیا: پیوٹن

دنیا

ماسکو: (ویب ڈیسک) روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے کہا ہے کہ ابھی تک فیصلہ نہیں کیا کہ آئندہ صدارتی انتخابات میں بھی حصہ لوں گا یا نہیں۔

روس کے صدر ولادیمیر پوٹن رواں صدی کے اوائل سے اپنے ملک کے اقتدار پر براجمان ہیں، کبھی بطور صدر اور کبھی بحیثیت وزیر اعظم۔ وہ سابق سوویت یونین کے لیڈر جوزف سٹالن کے بعد اس خطہ ارض پر طویل حکومت کرنے والے رہنما بن چکے ہیں۔

یہ امر اہم ہے کہ روس میں گزشتہ برس پارلیمنٹ نے مسودہ قانون کو منظور کر کے ملکی دستور کا حصہ بنایا تھا جس کے مطابق ولادیمیر پوٹن 2024ء کے بعد مزید دو مرتبہ صدر کا الیکشن لڑنے کے اہل ہیں۔ روس میں منصبِ صدر کی مدت چھ سالوں پر محیط ہوتی ہے۔

69 سالہ پیوٹن اس وقت اپنی چوتھی مدت صدارت کے نصف میں داخل ہو چکے ہیں۔ انہوں نے 2000ء میں اقتدار سنبھالا تھا۔

صدر ولادیمیر پیوٹن کو ملکی دارالحکومت ماسکو میں ایک سرمایہ کاری فورم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے ابھی فیصلہ نہیں کیا کہ انہیں اگلے انتخابات میں حصہ لینا چاہیے لیکن ایک بات یقینی طور پر واضح ہے کہ صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کے حق کی بدولت ملک میں داخلی سیاسی صورت حال مستحکم ہے۔

پیوٹن نے کہا کہ گزشتہ برس کی دستوری ترامیم نے حقیقت میں ملک کو اندرونی طور پر مستحکم ہونے میں مدد دی تھی۔
 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں