نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- دورہ سعودی عرب غیرمعمولی نوعیت کاتھا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- سعودی حکام کی دعوت پروزیراعظم نے 3 روزہ دورہ کیا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- پاک سعودی تعلقات پہلےبھی عمدہ تھےاب تعاون کومزیدفروغ دیاجارہاہے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- کل آرمی چیف افغانستان میں تھے،اہم ملاقاتیں ہوئیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- ہم افغانوں کےخیرخواہ ہیں،خوشحال اورخودمختارافغانستان دیکھناچاہتےہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- افغانستان میں امن سےپاکستان کوبھی فائدہ ہوگا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- کل کی نشست کےبعد خطےمیں امن کےواضح امکانات نظرآرہےہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- کابل میں اسکول پرحملہ افسوسناک ہے،پاکستان نےبھرپورمذمت کی،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- افغانستان میں امن طالبان اورافغان حکومت کےمفادمیں ہے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- پاکستان کی خواہش کےمطابق ایران اورسعودی تعلقات میں بہتری آرہی ہے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- سفیروں سےمتعلق شکایات پرتحقیقات کےساتھ اصلاحات بھی کررہےہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- وزیراعظم کاسفیروں سےمتعلق نوٹس درست ہے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- سفارتکاروں کےحوالےسےاقدامات کی تشہیرنہیں ہونی چاہیےتھی،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- وزیراعظم نےسیکرٹری جنرل اوآئی سی سےملاقات کی،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- اس معاملےپرانڈونیشیا،ایران اوریواین سیکرٹری جنرل کابھی بیان آیا،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- مسئلہ فلسطین پراوآئی سی کاہنگامہ اجلاس بلایاجائے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- عیدکےبعداعلیٰ سعودی حکام کاوفدپاکستان آئےگا،شاہ محمودقریشی

زوال کا عمل شروع ہو گیا

زوال کا عمل شروع ہو گیا

دنیا اخبار

بھارت کی ریاستی اسمبلیوں کے حالیہ انتخابات میں بی جے پی کی شکست کے بعد سیاسی تجزیہ نگاروں نے کہا ہے

نئی دہلی (دنیا ڈیسک) بھارت کی ریاستی اسمبلیوں کے حالیہ انتخابات میں بی جے پی کی شکست کے بعد سیاسی تجزیہ نگاروں نے کہا ہے کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ وزیراعظم مودی کے سیاسی زوال کا عمل شروع ہو چکا ہے ۔ بھارتی اخبارات کے مطابق نامور دانش ور سدھیندر گلکرنی نے کہا کہ انتخابی مہم کے دوران مودی نے کم از کم 38 ریلیوں سے خطاب کیا۔ مودی اور بی جے پی نے سب سے زیادہ توجہ مغربی بنگال پر دی، تقریباً تمام مرکزی وزرا ایک ماہ تک بنگال میں دن رات انتخابی مہم چلاتے رہے ، اس کے باوجود ممتا بنرجی کی جماعت نے ماضی کی نسبت زیادہ اور بی جے پی نے پہلے سے بھی کم تعداد میں نشستیں حاصل کیں، اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ عوام مودی اور ان کے وزرا سے بیزار ہو چکے ہیں۔ گلکرنی نے کہا کہ ممتا بنرجی کی صورت میں اب اپوزیشن کو ایک ایسی قائد مل گئی ہے جو ملک سے مودی کے سیاسی اثرات ہی نہیں بلکہ ان کی انتہا پسندانہ سیاسی سوچ کا خاتمہ کر سکتی ہے ، اس طرح بھارت کو ہندو ریاست بنانے کی کوشش ناکام ہو گی اور ملک ایک مرتبہ پھر تمام مذاہب کے لوگوں کا وطن بن جائے گا۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement