نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- کوئٹہ:وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال کاایوان میں اظہارخیال
  • بریکنگ :- یہ پہلی بارنہیں ماضی میں بھی عدم اعتمادکی تحریکیں آچکی ہیں،جام کمال
  • بریکنگ :- کسی کوناراض ہونےسےروک نہیں سکتے،وزیراعلیٰ جام کمال
  • بریکنگ :- رائےشماری کےروزہونےوالےفیصلےکوقبول کروں گا،جام کمال
  • بریکنگ :- کوئٹہ:میں استعفیٰ نہیں دوں گا،وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال
  • بریکنگ :- کوئٹہ:ثنابلوچ کاچیلنج قبول کرتاہوں،وزیراعلیٰ جام کمال
  • بریکنگ :- 2فیصدووٹ نہ ملےتوہمیشہ کیلئےسیاست چھوڑدوں گا،جام کمال
  • بریکنگ :- کوئٹہ:ثنابلوچ اپنی بات پرقائم رہیں،وزیراعلیٰ جام کمال
  • بریکنگ :- ارکان اسمبلی لاپتہ ہیں توان کےاہلخانہ تھانےجاکرمقدمہ درج کرالیں،جام کمال
  • بریکنگ :- تحریک ناکام ہوئی توحکومت کریں گےورنہ اپوزیشن میں ہوں گے،جام کمال
  • بریکنگ :- بلوچستان اسمبلی اجلاس میں تحریک عدم اعتمادپربحث مکمل
  • بریکنگ :- کوئٹہ:تحریک عدم اعتماد پررائےشماری 25اکتوبرکوہوگی
  • بریکنگ :- کوئٹہ:یہ سیاست کاحصہ ہےچلتاہے،وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال
  • بریکنگ :- جب حکومت میں ہوں توزیادہ ناراضگیاں ہوتی ہیں،جام کمال
  • بریکنگ :- تعلقات قائم رہیں گے،ہم ملتےجلتےرہیں گے،وزیراعلیٰ جام کمال
  • بریکنگ :- یہ سب سیاست کاحصہ ہےذاتیات تک نہیں جاناچاہیے،جام کمال
  • بریکنگ :- اپوزیشن کوساڑھے3سال سےگلےشکوےہیں،جام کمال
  • بریکنگ :- کوئٹہ:میں نہیں کہتاہم سب ٹھیک کررہےہیں،جام کمال
  • بریکنگ :- بلوچستان کےہرضلع میں کام ہورہاہے،وزیراعلیٰ جام کمال
  • بریکنگ :- کوئٹہ:سیاست میں کسی کواغوانہیں کیاجاتا،جام کمال
  • بریکنگ :- ناراض ارکان سےقلمدان واپس لےسکتےتھے،جام کمال
Coronavirus Updates

کوئلے کی قلت، بھارت بدترین لوڈشیڈنگ کے دہانے پر

کوئلے کی قلت، بھارت بدترین لوڈشیڈنگ کے دہانے پر

دنیا اخبار

ممبئی لوڈشیڈنگ سے 2روزکی دوری پر، راجستھان میں چار گھنٹے تک بجلی بند ، 3 روز کے استعمال کا ایندھن باقی،متعدد پاور سٹیشن بند:اکانومسٹ کی رپورٹ

نئی دہلی (دنیا مانیٹرنگ)کوئلے کی قلت بھارت کو بدترین لوڈشیڈنگ کے دہانے پر لے آئی، سنگین بحران کے باعث کوئلے سے چلنے والے متعدد پاور سٹیشن بند ہو گئے ، مودی سرکار ریاستی حکومتوں کو طفل تسلیاں دینے لگی ۔ اکانومسٹ کی رپورٹ کے مطابق بھارت میں دو تہائی سے زائد بجلی کوئلے سے چلنے والے 135 پاور سٹیشنوں سے حاصل ہوتی ہے ، ان میں بیشتر پاور سٹیشنوں کے پاس کوئلے کا محفوظ ذخیرہ خطرناک حد تک کم ہے ، یہ عموماً 30 دن کے استعمال کا کوئلہ ذخیرہ کرتے ہیں،مگر گزشتہ ہفتے سے ان کے پاس بمشکل تین روز کے استعمال کا ایندھن بچا ہے ، قلت کے باعث کچھ پاور سٹیشن بند ہوچکے ہیں۔ بھارت کی 28 ریاستی حکومتیں بجلی کی سپلائی برقرار رکھنے کی ذمہ دار ہیں۔ راجستھان حکومت نے 12 اضلا ع میں ایک سے چار گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کا شیڈول جاری کر دیا ہے ، وزیراعلیٰ دہلی وزیراعظم مودی سے سپلائی بہتر بنانے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ممبئی ایک بڑا صنعتی مرکز ہے ، بدترین لوڈشیڈنگ سے صرف ایک دو روز کی دوری پر ہے ، محکمہ توانائی کو بدترین تاریکی سے بچنے کیلئے 730 ارب روپے کی فوری ضرورت ہے ۔مرکزی وزیر معدنیات کے مطابق ملک میں بجلی کے بحران کا کوئی خطرہ نہیں، جبکہ بھارت کے تمام اخبار صفحہ اوّل پر سنگین بحران کا رونا رو رہے ہیں۔رپورٹ کے مطابق اگلے چھ ماہ کے دوران بھارت کو معاشی بحالی کا عمل ٹریک پر رکھنے کی ضرورت ہے ، جوکہ بلیک آؤٹ میں ممکن نہیں۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement