اسرائیل غزہ میں عارضی جنگ بندی کیلئے تیار :امریکی صدر

اسرائیل غزہ میں عارضی جنگ بندی کیلئے تیار :امریکی صدر

واشنگٹن (رائٹرز )امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا ہے کہ اسرائیل رمضان کے دوران غزہ پر حملے روکنے کے لیے تیار ہے اور اگلے ہفتے جنگ بندی کا آغاز ہو سکتا ہے ۔

ٹی وی  انٹرویو کے دوران انہوں نے بتایا کہ 'میرے قومی سلامتی کے مشیر نے مجھے بتایا ہے کہ ہم جنگ بندی کے قریب ہیں، ابھی یہ معاملے طے نہیں پایا مگر مجھے توقع ہے کہ 4 مارچ تک جنگ بندی ہو جائے گی۔امریکی صدر کا یہ بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب ثالث ممالک کی جانب سے غزہ میں جاری جنگ کو روکنے کے لیے امن معاہدے پر کام کیا جا رہا ہے ۔جو بائیڈن نے کہا کہ 'رمضان شروع ہونے والا ہے اور ایک ایسا معاہدہ موجود ہے جس کے تحت اسرائیل کی جانب سے رمضان کے دوران جنگی کارروائیاں نہیں کی جائیں گی، جس کے دوران یرغمالیوں کی رہائی کا وقت بھی مل جائے گا'۔حماس کے 2 سینئر عہدیداروں نے بتایا کہ امن معاہدے کے حوالے سے امریکی صدر کا بیان قبل از وقت ہے کیونکہ ابھی ہم اس پیشکش کا جائزہ لے رہے ہیں۔مذاکرات میں شامل ذرائع نے بتایا کہ امن معاہدے کا مسودہ حماس کو بھیجا گیا ہے ، جس کے تحت 40 روزہ جنگ بندی ہوگی جبکہ حماس 40 یرغمالی اور اسرائیل 400 فلسطینی قیدی رہا کرے گا۔

 

 

Advertisement
روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں