نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- سکردو:وزیراعلیٰ گلگت بلتستان خالدخورشیدکی پریس بریفنگ
  • بریکنگ :- آرٹیکل ون میں شامل ہوئےبغیرگلگت بلتستان بااختیارصوبہ بنےگا،خالدخورشید
  • بریکنگ :- جی بی کیلئےقومی اسمبلی میں چار،سینیٹ میں 8نشستیں مختص ہوں گی،وزیراعلیٰ
  • بریکنگ :- جی بی سےمنتخب قومی اسمبلی ممبروزیراعظم پاکستان بھی بن سکتاہے،خالدخورشید
  • بریکنگ :- عبوری آئینی صوبےکیلئےوفاق کی اپوزیشن جماعتوں سےتعاون کی امیدہے،وزیراعلیٰ
  • بریکنگ :- گلگت بلتستان میں لینڈریفارمزکمیشن بنایاگیاہے،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان
  • بریکنگ :- لینڈمافیااورمحکمہ مال کےکرپٹ اہلکاروں کونشان عبرت بنائیں گے،خالدخورشید
  • بریکنگ :- 5 سال میں نیاگلگت بلتستان دےکرجائیں گے،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان
  • بریکنگ :- 150 میگاواٹ بجلی کےمنصوبوں پرکام شروع کردیا،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان
  • بریکنگ :- ہرضلع کےاسپتالوں میں آئی سی یوبنائیں گے،وزیراعلیٰ خالدخورشید
  • بریکنگ :- سکردو:2میڈیکل کالجزبھی قائم کیےجائیں گے،وزیراعلیٰ گلگت بلتستان
Coronavirus Updates

تازہ اسپیشل فیچر

خوشاب کا ایسا گاؤں جہاں مکین آج بھی بارشوں کا پانی پینے پر مجبور

پاکستان

خوشاب:(دنیا نیوز)پنجاب کے ضلع خوشاب میں پانچ ہزارسے زائد آبادی والے گاؤں مہوڑیانوالہ کے مکین آج کے دور میں بھی بارشوں کا پانی پینے پر مجبور ہیں۔

پنجاب میں ایک ضلع ایسا بھی ہے جہاں پر مضر صحت پانی کے حصول کیلئے بھی خواتین کو لمبا سفر طے کرنا پڑتا ہے اور یہ ضلع کوئی اور نہیں بلکہ خوشاب ہے۔

قدیم اور خوبصورت وادی سون قدرتی مناظر کے باعث دنیا بھر میں مشہور ہے،لیکن اس وادی کا دور افتادہ گاؤں مہوڑیانوالہ آج کے جدید دور میں بھی پینے کے صاف پانی جیسی بنیادی سہولت سے محروم ہے،پانچ ہزار سے زائد آبادی پر مشتمل گاؤں کے مکین بارش کاجمع کیا ہوا پانی پینے پر مجبور ہیں۔

مہوڑیانوالہ گاؤں کے باہر تالابوں میں جمع ہونےوالا پانی نہ صرف انسانوں بلکہ جانوروں کی پیاس بھی بجھاتا ہے جبکہ خواتین کو صاف پانی کیلئے دور دراز کا سفر طے کرنا پڑتا ہے۔

مکینوں کو شکوہ ہے کہ منتخب نمائندے ووٹ لینے کے وقت تو بڑے دعوے کرتے ہیں لیکن اس کے بعد مسائل کا حل تو درکنار علاقے کا رخ کرنے کی زحمت بھی نہیں گوارا نہیں کرتے۔