نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- ظالم حکمرانوں نےتاریخی بوجھ ملک اورقوم پرلاددیا،مریم اورنگزیب
  • بریکنگ :- عمران خان نےسعودی عرب کو 3 ارب ڈالرواپسی کےلیےچین سےقرض لیا،بلاول بھٹو
  • بریکنگ :- عمران خان پوری دنیامیں کشکول اٹھائےگھوم رہےہیں،بلاول بھٹو
  • بریکنگ :- قرض تلےدباہرپاکستانی عمران خان کی نااہلی کی قیمت اداکررہاہے،بلاول بھٹو

پنجاب اسمبلی : آرڈیننس، مسودہ قانون ایجنڈے سے ہٹ کر پیش کرنے پر اپوزیشن کا واک آؤٹ

پنجاب اسمبلی : آرڈیننس، مسودہ قانون ایجنڈے سے ہٹ کر پیش کرنے پر اپوزیشن کا واک آؤٹ

دنیا اخبار

اپوزیشن کے شور شرابا کے باوجود وزیر قانون نے بل پیش کر دیا، 11 نئے آرڈیننسوں میں 90 روزکی توسیع لے لی ، وزیر اعلیٰ ایوان میں آکر الزامات کا جواب دیں، اپوزیشن ، ختم نبوت پر وزیر اعظم نے جرات مندانہ موقف اپنایا ، پرویز الٰہی

لاہور (سپیشل رپورٹر،اپنے سیاسی رپورٹرسے ) پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں حکومت کی جانب سے پرائیویٹ ممبرز ڈے پر سرکاری کارروائی کرنے پر اپوزیشن نے شدید احتجاج کیا اور غیر سرکاری ڈے پر سرکاری کارروائی کو غیر آئینی اور غیر قانونی قرار دیدیا،اپوزیشن اراکین احتجاجاً ایوان سے واک آئوٹ کر گئے ، اپوزیشن کا کہنا تھا جتنے آرڈیننس اور مسودہ قانون ایوان میں متعارف کروائے گئے وہ ایجنڈے سے ہٹ کر ہیں اس غیر قانونی کارروائی کاحصہ نہیں بن سکتے ، اویس لغاری نے کہاکہ وزیر اعلیٰ کب تک ایوان سے چھپے رہیں گے ، ایوان میں آکر الزامات کا جواب دیں۔پنجاب اسمبلی کااجلاس دو گھنٹے پچاس منٹ کی تاخیر سے سپیکر پرویز الٰہی کی صدارت میں شروع ہوا ۔ اجلاس میں رولز معطل کر کے پرائیویٹ ڈے کو بمعہ وقفہ سوالات جمعرات تک ملتوی کر دیا ۔ اپوزیشن رکن اویس لغاری نے نکتہ اعتراض اٹھایا ، وزیر اعلیٰ پنجاب پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہاکہ عاشقان رسولؐ پر پولیس تشدد کیاگیا ، نوجوانوں پر رسول اکرمؐ کے نام پر آنسو گیس پھینکی گئی ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب ایوان میں آئیں گے ، کب تک چھپتے رہیں گے ؟وہ اپنے اوپر الزامات کا جواب دیں۔ انہوں نے کہا مڈل کلاس کی بچیاں تعلیم سے اوپن میرٹ سے افسر لگتی ہیں ۔ دودن کی شہرت کے لئے آپکے لوگ بے عزتی کرتی ہیں،کیا خواتین کے حقوق کے ساتھ حکومت کھڑی ہوئی ؟۔شہبازشریف دور میں بھی معطلیاں ہوتی رہیں لیکن اس طرح بے عزتی نہیں کی گئی اس کا جواب دیاجائے ،سید صمصام بخاری نے کہا مذہبی معاملات پر انتشار کے بجائے محبت کا درس دیاجائے ۔وزیر اعظم نے اچھا راستہ اختیار کیا،اتحاد امت قوم کا تقاضا ہے ،اجلاس میں سپیکر پرویز الٰہی نے ختم نبوتؐ پر قانون سازی کا کریڈٹ پنجاب اسمبلی کو دیتے ہوئے کہاکہ اس معاملے پر سیاسی جماعتیں اور حکومت اکٹھی ہے ختم نبوتؐ ایمان کا اہم ترین حصہ ہے ، تمام سیاسی جماعتوں سمیت اقلیتی ارکان نے بھی قانون سازی میں ساتھ دیا، سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی نے کہا ختم نبوتؐ تو ہمارا ایمان ہے اس میں کوئی دوسری رائے نہیں ،وزیر اعظم نے ختم نبوتؐ کے معاملے ہے جرات مندانہ موقف اپنایا ،وزیر اعظم انٹرنیشنل فورم پر بھی بات کریں گے ،ختم نبوتؐ کے معاملے پر سمجھوتے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ، پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں بل پیش کرنے پر اپوزیشن ممبران نے خوب شور کیا اور کہا ہمیں ان بلوں کی کاپیاں نہیں دی گئیں ،اپوزیشن ممبران نے ایجنڈے کی کاپی فراہم کرنے کا مطالبہ کیا تو وزیر قانون نے کہا ابھی صرف بل متعارف کرائے جا رہے ہیں جب بل منظور کریں گے تو اس کی کاپیاں اپوزیشن کو فراہم کر دی جائیں گی ،اپوزیشن کے شور شرابے کے باوجود صوبائی وزیر قانون نے بل ایوان میں پیش کر دیا ،جس پر اپوزیشن احتجاجاً واک آئوٹ کر گئی ۔راجہ بشارت نے اپوزیشن کی عدم موجودگی میں 11 نئے آرڈیننسوں میں ایوان سے 90 روزکی توسیع لے لی اور دو نئے بل ایوان میں منظوری کے لیے پیش کیے جبکہ 8 بل بھی منظور کر لیے گئے ۔ منظور کیے جانے والے بلوں میں پنجاب شوگر فیکٹریز کنٹرول ترمیمی بل 2020، پنجاب انفیکشیس ڈزیزز کنٹرول و پریونشن ترمیمی بل، پنجاب لیٹرز آف ایڈمنسٹریشن اینڈ سکسیشن سرٹیفکیٹس بل 2021 ،لاہور سنٹرل بزنس ڈویلپمنٹ ڈسٹرکٹ اتھارٹی بل، راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی ترمیمی بل ،ایمرسن یونیورسٹی ملتان بل 2021 اور لوکل گورنمنٹ ترمیمی بل 2020 شامل ہیں۔ ایوان میں یونیورسٹی آف چائلڈ ہیلتھ سائنسز بل اور پنجاب ایجوکیشنل انسٹیٹیوشنز بل 2021 کے نام سے دو نئے بل متعارف کروائے گئے ۔اجلاس کی کارروائی مکمل ہونے پر سپیکر نے پنجاب اسمبلی کااجلاس آج صبح ساڑھے گیارہ بجے تک ملتوی کر دیا۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement