نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- ہم افغانوں کےخیرخواہ ہیں،خوشحال اورخودمختارافغانستان دیکھناچاہتےہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- افغانستان میں امن سےپاکستان کوبھی فائدہ ہوگا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- افغانستان میں امن طالبان اورافغان حکومت کےمفادمیں ہے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- پاکستان کی خواہش کےمطابق ایران اورسعودی تعلقات میں بہتری آرہی ہے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- سفیروں سےمتعلق شکایات پرتحقیقات کےساتھ اصلاحات بھی کررہےہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- وزیراعظم کاسفیروں سےمتعلق نوٹس درست ہے،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- سفارتکاروں کےحوالےسےاقدامات کی تشہیرنہیں ہونی چاہیےتھی،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- دورہ سعودی عرب غیرمعمولی نوعیت کاتھا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- سعودی حکام کی دعوت پروزیراعظم نے 3 روزہ دورہ کیا،شاہ محمودقریشی
  • بریکنگ :- پاک سعودی تعلقات پہلےبھی عمدہ تھےاب تعاون کومزیدفروغ دیاجارہاہے،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- کل آرمی چیف افغانستان میں تھے،اہم ملاقاتیں ہوئیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- کل کی نشست کےبعد خطےمیں امن کےواضح امکانات نظرآرہےہیں،وزیرخارجہ
  • بریکنگ :- کابل میں اسکول پرحملہ افسوسناک ہے،پاکستان نےبھرپورمذمت کی،وزیرخارجہ

10 ماہ میں 3780 ارب کا مجموعی ریونیو حاصل، ہدف سے 143 ارب اضافہ

10 ماہ میں 3780 ارب کا مجموعی ریونیو حاصل، ہدف سے 143 ارب اضافہ

دنیا اخبار

ماہ اپریل میں ہدف سے 159 فیصد زائد 384 ارب کے محاصل،گراس ریونیو 16 فیصد اضافے کیساتھ 3976 ارب روپے رہا ، رواں مالی سال میں اب تک195ارب روپے کے ریفنڈزجاری،کوروناسے مئی، جون میں محاصل پر منفی اثرات پڑنے کا خدشہ

اسلام آباد(خبرنگارخصوصی)ایف بی آر نے رواں مالی سال کے پہلے 10 ماہ میں حاصل کردہ محصولات کی تفصیلات جاری کردیں جس کے مطابق جولائی سے اپریل تک 3780 ارب روپے کا نیٹ ریونیو حاصل کیا گیا جو کہ اس عرصہ کیلئے مقرر کردہ ہدف 3637 ارب روپے سے 143 ارب زائد ہے ۔ اس طرح پچھلے سال اس عرصہ کے حاصل کردہ نیٹ ریونیو میں 3320 ارب روپے کے مقابلے میں 14 فیصد اضافہ ہوا ہے ۔ ماہ اپریل میں مجموعی محاصل 384 ارب روپے رہے جبکہ مطلوبہ ہدف 242 ارب روپے تھا، اس طرح مقرر کردہ ہدف کے مقابلے میں 159 فیصد اضافہ ہوا جبکہ پچھلے سال اپریل کے حاصل کردہ 240 ارب روپے کے ریونیو کے مقابلے میں 57 فیصد اضافہ ہوا ہے ۔ اسی طرح رواں مالی سال کے پہلے 10 ماہ میں گراس ریونیو پچھلے سال کے 3438 ارب روپے کے مقابلے میں 3976 ارب روپے رہا اور اس میں 16 فیصد اضافہ ہوا۔ رواں مالی سال میں اب تک 195 ارب روپے کے ریفنڈز جاری کئے جاچکے ہیں جبکہ پچھلے سال کے اس عرصہ میں یہ حجم 118 ارب روپے تھا۔ اس سال اب تک ریفنڈز کے اجرا میں 65 فیصد اضافہ ہوا ہے ۔ ریونیو کے حصول میں بہتری معاشی سرگرمیوں میں تیزی کی نشاندہی کرتی ہے حالانکہ اس وقت کورونا کی تیسری لہر کا بھی سامنا ہے ۔ کورونا کے باعث اپریل کے آخری ایام میں ریونیو جمع کرنے کا عمل سست رہا، کورونا کے باعث مئی اور جون کے محاصل پر بھی منفی اثرات پڑنے کا خدشہ ہے ۔ اسی طرح یکم مئی 2021 تک ٹیکس سال 2020 کیلئے انکم ٹیکس گوشوارے داخل کرانے والوں کی تعداد 29 لاکھ ہوچکی ہے جو پچھلے سال اس عرصہ تک 26 لاکھ تھی، اس طرح گوشوارے داخل کرانے والوں کی تعداد میں 12فیصد اضافہ ہوا ہے ۔ ٹیکس گوشواروں کے ساتھ ادا شدہ ٹیکس 50.6 ارب روپے رہا جو پچھلے سال اس عرصہ میں 33.1 ارب روپے تھا۔ اس طرح اس سال ٹیکس کی ادائیگی میں 53 فیصد اضافہ ہوا ہے ۔ ایف بی آر نے پوائنٹ آف سیل سسٹم کے ساتھ منسلک ہونے والے بڑے ریٹیلرز کی تفصیلات بھی جاری کردی ہیں جن کے مطابق 10583 سیل مشینیں پوائنٹ آف سیل سسٹم کے ساتھ منسلک کی جاچکی ہیں۔ پاکستان کسٹمز نے رواں مالی سال کے پہلے 10 ماہ میں 606 ارب روپے کی کسٹم ڈیوٹی حاصل کی جبکہ مقرر کردہ ہدف 507 ارب روپے تھا۔ اپریل میں 65 ارب روپے کی کسٹم ڈیوٹی حاصل ہوئی جبکہ مقرر کردہ ہدف 59 ارب روپے تھا۔ اپریل میں 4.54 ارب روپے کی سمگل شدہ اشیا ضبط کی گئیں جبکہ پچھلے سال اس عرصہ میں یہ ہدف 3.43 ارب روپے تھا۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement