نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- مردان:پیپلزپارٹی کےکارکنوں کابلاول بھٹوکےسامنےاحتجاج
  • بریکنگ :- مردان:کارکنوں کےپارٹی کےصوبائی صدرکیخلاف نعرے
Coronavirus Updates

احساس پروگرام :طلبہ کو سکالر شپ بھی دینگے :عمران خان

 احساس پروگرام :طلبہ کو سکالر شپ بھی دینگے :عمران خان

دنیا اخبار

اسلام آباد میں پہلے ون ونڈو احساس سینٹر کا افتتاح، اہداف میں آسانی ہوگی کمزور طبقے کو غربت سے نکالنے کیلئے جامع حکمت عملی بنائی گئی:اجلاس میں گفتگو

اسلام آباد(خصوصی نیوز رپورٹر،اے پی پی) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ احساس پروگرام فلاحی ریاست کے قیام کی بنیاد ہے ، یہ ایک زبردست اقدام ہے ، طلبہ کو سکالرشپس بھی دینگے ۔ اس پروگرام اور ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے تحت طلبہ کو دیئے جانے والے سکالر شپس کو ایک ڈیٹا بیس پر لایا جائے ۔ ستارہ مارکیٹ اسلام آباد میں پہلے ون ونڈو احساس سینٹر کے افتتاح کے موقع پر انہوں نے کہاکہ جب اعدادوشمار دستیاب ہوں گے تو اہداف کا تعین کرنے میں آسانی ہوگی۔ اس موقع پر وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے بریفنگ دی اور بتایا کہ یہ پروگرام جدید ٹیکنالوجی سے ہم آہنگ ہوگا جس کے تحت قابل اور ضرورت مند طلبہ کو سکالر شپس بھی دیئے جائیں گے ۔ ہر ضلع میں احساس ون ونڈو سینٹر قائم کرنے کے وزیراعظم کے وعدے کو عملی جامہ پہنائیں گے ۔ اس پروگرام کے تحت قلیل مدت میں رجسٹریشن اور ریکارڈ دستیاب ہوگا۔ اس موقع پر وزیر اعظم نے پودا بھی لگایا۔علاوہ ازیں وزیرِ اعظم عمران خان کی زیرِ صدارت کامیاب پاکستان پروگرام کا اجلاس ہوا جس میں کامیاب جوان پروگرام کے تحت کامیاب کاروبار، کامیاب کسان اور کامیاب ہنرمند پروگرام، کم لاگت رہائشی سکیموں اور کامیاب پاکستان ہاؤسنگ کیلئے ہول سیل لینڈنگ کو ایک پروگرام، کامیاب پاکستان پروگرام میں شامل کرنے پر بریفنگ دی گئی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ کامیاب پاکستان پروگرام ملک میں معاشی سرگرمیوں کو بڑھانے اور لوگوں کو روزگار کیلئے خود کفیل بنانے میں اہم کردار ادا کرے گا، پروگرام کے تحت بڑے پیمانے پر نئے امید واروں کو کاروبار، کم لاگت رہائش اور زرعی قرضے فراہم کئے جائیں گے ۔ اس موقع پر وزیرِ اعظم نے کہا کہ پاکستان میں پہلی دفعہ معاشی طور پر کمزور طبقے کو غربت سے نکالنے کیلئے جامع حکمت عملی مرتب کی گئی ہے ۔ ہمسایہ ملک چین اور بھارت کی مثال سامنے ہے ، چین نے پچھلے تیس سالوں میں لاکھوں لوگوں کو ایسے اقدامات کے تحت غربت سے نکالا جبکہ بھارت اس میں ناکام رہا، حکومت کی اولین ترجیح نچلے طبقے کے لوگوں کی مالی مدد کے ساتھ ساتھ ایسے اقدامات سے انہیں روزگار میں خود کفیل بنانا ہے ۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement