نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- سپریم کورٹ کااورنگی اورگجرنالےکی چوڑائی پرکام شروع کرنےکا حکم
  • بریکنگ :- کراچی:متاثرین کی معاوضےاورآپریشن روکنےکی درخواست مسترد
  • بریکنگ :- کراچی:سپریم کورٹ نےنالوں پرحکم امتناع بھی کالعدم قراردےدیا
Coronavirus Updates

آج وفاقی بجٹ پیش ہوگا،تنخواہوں ،پنشن میں اضافہ

آج وفاقی بجٹ پیش ہوگا،تنخواہوں ،پنشن میں اضافہ

دنیا اخبار

دفاع1330،ایف بی آرکی ٹیکس وصولی کاہدف5820ہوگا

اسلام آباد(خبرنگار خصوصی)پی ٹی آئی حکومت آج اپنا تیسرا وفاقی بجٹ 2021-22 پیش کرے گی۔ وفاقی کابینہ آج دوپہر 2 بجے وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت اپنے خصوصی اجلاس میں بجٹ کی منظوری دے گی۔ بعدازاں وزیر خزانہ شوکت ترین قومی اسمبلی میں بجٹ پیش کریں گے ۔ آئندہ بجٹ میں ٹیکس آمدن 5820 ارب اور نان ٹیکس آمدن 1420 ارب روپے ہوسکتی ہے ۔ ایک لاکھ کی کی خریداری پر شناختی کارڈ کی شرط عائد ہوسکتی ہے ۔ وفاقی بجٹ پر آخری وقت میں نظرثانی کے باعث مجموعی حجم 8 ہزار ارب سے 10 ہزار ارب روپے کے درمیان رہنے کا امکان ہے ۔ نئے مالی سال کے بجٹ میں بجٹ خسارے کا تخمینہ 3 ہزار 500 ارب رہنے کی توقع ہے ۔ 3105 ارب روپے قرضوں اور سود کی ادائیگی کیلئے رکھے جائیں گے ۔ صوبوں کو این ایف سی ایوارڈ کے تحت 3527 ارب روپے فراہم کئے جائیں گے ۔ دفاع 1330 ارب، وفاقی سول حکومت کے اخراجات 510 ارب، پنشن 480 ارب، سبسڈیز 501 ارب، صوبوں کو ترقیاتی اور غیر ترقیاتی گرانٹس کیلئے 994 ارب اور وفاقی ترقیاتی پروگرام کیلئے 900 ارب روپے مختص کئے جا رہے ہیں۔ برآمدات کا ہدف 26 ارب 80 کروڑ ڈالر اور درآمدات کا ہدف 55 ارب 30 کروڑ ڈالر ہوگا۔ بجٹ میں سرکاری ملازمین کو تنخواہوں اور مراعات کی مد میں 160 ارب روپے مالیت کا پیکیج دیئے جانے کا امکان ہے ۔ پے اینڈ پنشن کمیشن کی جانب سے دی گئی سفارشات آج حتمی منظوری کیلئے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں پیش کی جائیں گی جن میں 4 ایڈہاک الائونسز کو ضم کرنے کے بعد بنیادی تنخواہوں کے سکیلوں پر نظرثانی کرکے سیکرٹریٹ کے اندر کام کرنے والے ملازمین کیلئے 10 یا 15فیصد اور سیکرٹریٹ سے باہر دیگر وفاقی اداروں میں کام کرنے والے ملازمین کی تنخواہوں میں10 فیصد اضافہ کی تجویز ہے ۔ پنشن میں 15 فیصد اضافہ کرنے کی تجویز ہے ۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement