نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- سکیورٹی الرٹ،دورہ پاکستان منسوخ کررہےہیں،نیوزی لینڈکرکٹ بورڈ
  • بریکنگ :- ٹیم کی روانگی کےانتظامات کیےجارہےہیں،نیوزی لینڈکرکٹ بورڈ
Coronavirus Updates

تعلیمی ادارے ،ٹرانسپورٹ کھولنے کااعلان، لاہورسمیت 6اضلاع میں پابندیاں برقرار

تعلیمی ادارے ،ٹرانسپورٹ کھولنے کااعلان، لاہورسمیت 6اضلاع میں پابندیاں برقرار

دنیا اخبار

کل سے 50فیصد حاضری کے ساتھ سکول ،کالج کھل جائیں گے ، 50 فیصد مسافروں کیساتھ پبلک ٹرانسپورٹ چلائی جائے گی ، ویکسین نہ لگوانے پرمزیدسختی کافیصلہ ، فیصل آباد، ملتان، سرگودھا، گجرات اور بنوں میں 22ستمبرتک بندشیں ،چوتھی لہرکمزور،خطرہ ابھی باقی ہے :اسدعمر ،لاہور13سمیت ملک میں مزید 78اموات

اسلام آباد،لاہور (ایجنسیاں،ایجوکیشن رپورٹر ،اپنے سٹاف رپورٹرسے )حکومت نے کل سے تعلیمی ادارے ،ٹرانسپورٹ کھولنے کااعلان کردیا، لاہورسمیت 6اضلاع میں پابندیاں برقراررہیں گی۔وفاقی وزیر منصوبہ بندی ترقی اصلاحات وخصوصی اقدا مات ونیشنل کمانڈ آپریشن سنٹر کے سربراہ اسد عمر نے کہاہے کہ 16 ستمبر (کل)سے 50 فیصد حاضری کے ساتھ سکول ،کالج کھولے جائیں گے ، کورونا وائرس کی وبا کی چوتھی لہر کی شدت میں بتدریج کمی آ رہی ہے ، 50 فیصد مسافروں کے ساتھ پبلک ٹرانسپورٹ کھولنے کا فیصلہ کیا ہے ۔اسلام آباد کی 52 فیصد آبادی کی ویکسی نیشن ہو چکی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے این سی او سی میں نیوز کانفرنس میں کیا۔انہوں نے کہا کہ ہسپتالوں میں انتہائی نگہداشت وارڈز میں کووڈ۔19 کے مریضوں کا دباؤ ہے ، کوشش ہے آکسیجن کی فراہمی میں رکاوٹ نہ آئے ، چند ہفتے کے دوران آکسیجن کی طلب میں اضافہ ہوا، وبا کی صورتحال بہتر ہوئی ہے مگر خطرہ مکمل طور پر ختم نہیں ہوا، کووڈ۔19 کے 5300 مریض ہسپتالوں میں آکسیجن پر ہیں، ایس او پیز کو نظرانداز کرنا کورونا کیسز میں اضافے کا باعث بنا ہے ۔اسد عمر نے کہا کہ 24 میں سے 18 اضلاع میں وبا کی صورتحال میں بہتری آئی ہے ، 6 اضلاع میں بندشیں 22ستمبرتک برقرار رہیں گی، ان اضلاع میں لاہور، فیصل آباد، ملتان، سرگودھا، گجرات اور بنوں شامل ہیں، 6 اضلاع میں آؤٹ ڈور ڈائننگ کا ٹائم بڑھا کر 12 بجے تک کیا جا رہا ہے ۔ ہم نے ملک کے 24 اضلاع میں کیسز کی تعداد کے پیش نظر 4 سے 15 ستمبر تک زائد بندشیں عائد کی تھیں تاہم ان میں سے 18 اضلاع میں صورتحال بہت بہتر ہوگئی ہے ۔انہوں نے کہا کہ مذکورہ 18 اضلاع میں بھی کورونا پابندیاں برقراررہیں گی جس طرح ملک کے دیگر حصوں میں نافذ ہیں جبکہ دیگر 6 اضلاع میں زائد بندشیں قائم رہیں گی۔ انہوں نے کہا کہ انتہائی درجے کی متعدد پابندیوں میں سے چند ایک ختم کررہے ہیں جس میں انٹرسٹی ٹرانسپورٹ فعال کرنے کی اجازت دی جارہی ہے لیکن بسوں میں مسافروں کی تعداد نصف ہوگی۔ ان اضلاع میں تعلیمی ادارے 50 فیصد حاضری کی بنیاد پر کھولے جارہے ہیں اور ان کی کلاسز جمعرات سے شروع ہوجائیں گی۔ لاہور، فیصل آباد، ملتان، سرگودھا، گجرات اور بنوں میں ان ڈور ڈائننگ کی اجازت نہیں ہوگی لیکن ریسٹورنٹس رات 12 بجے تک کھلے رہ سکتے ہیں۔ ان اضلاع میں تفریحی پارکس اور جم مکمل طور پر ویکسی نیٹڈ لوگوں کے لیے کھول د ئیے جائیں گے ، عوامی اجتماعات میں صرف 400 لوگوں کو شرکت کی اجازت ہوگی۔ ملک میں حالیہ کورونا کی چوتھی لہر میں بتدریج کمی دیکھی جارہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ ویکسی نیشن کے عمل میں تیزی لائی جائے گی اور ملک کے بڑے شہروں میں 15 سال سے زائد عمر کے 40 فیصد شہریوں کو ویکسی نیشن کا عمل مکمل کیا جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ حکومت 200 ارب روپے کی ویکسین کی خریداری کا عمل جاری رکھے ہوئے ہے ۔ملک میں کورونا پابندیاں 30 ستمبر تک قائم رہیں گی۔انہوں نے کہا کہ 30 ستمبر کے بعد جو افراد ویکسین کی دونوں خوراکیں نہیں لگوائیں گے ان پر پابندیاں مزید سخت کی جائیں گی۔ جن افراد نے ویکسین کی دونوں خوراکیں نہیں لگوائیں وہ ہوائی سفر نہیں کر سکیں گے ۔شاپنگ مالز میں کام کرنے والے افراد یا شاپنگ کرنے والے افراد پربھی 30 ستمبر کے بعد ویکسین کی دونوں خوراکیں نہ لگانے پر پابندیاں لگائی جائیں گی۔ڈے ہوٹلز اور گیسٹ ہاؤسز میں بکنگ کیلئے ویکسین کی دونوں خوراکیں ضروری ہوں گی ۔اسی طرح ان ڈور اور آؤٹ ڈور ڈائننگز پر بھی ویکسین کی دونوں خوراکیں نہ لگوانے پر پابندیوں کا اطلاق ہو گا۔انہوں نے مزید کہا کہ اسلام آباد میں 15 سال سے زائد عمر کے 52 فیصد افراد کو ویکسین لگ چکی ہے ۔انہوں نے تمام صوبائی حکومتوں اور عملے سے درخواست کی کہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو ویکسین لگائیں تاکہ اس موذی وائرس سے نجات حاصل ہو اور کم سے کم پابندیاں لگائی جائیں ۔دریں اثناوفاقی وزیر تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت شفقت محمود نے اپنے ٹویٹ میں کہا ہے کہ مجھے اس بات کا اعلان کرتے ہوئے خوشی ہو رہی ہے کہ 16 ستمبر سے ملک بھر میں تعلیمی ادارے دوبارہ کھل جائیں گے ۔ وزیرتعلیم پنجاب ڈاکٹر مراد راس نے بھی ٹویٹ کرتے ہوئے کہاکہ پنجاب بھر میں نجی اور سرکاری سکولوں کو کورونا ایس او پیز کے تحت جمعرات سے کھولا جائے گا ۔ دوسری طرف ملک بھر میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں مزید 78افراد کوروناسے چل بسے ، 2580نئے کیسز رپورٹ ہوئے ۔ مثبت کیسز کی شرح 5 اعشاریہ 44 فیصد ہو گئی۔ گزشتہ روز لاہور میں کورونا سے 13 جبکہ صوبہ بھر میں 34 اموات رپورٹ ہوئیں۔ پنجاب سے 1264نئے کیسز رپورٹ ہوئے ۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں لاہور میں 617 اور راولپنڈی میں 99 کیسز رپورٹ ہوئے ۔ سیکرٹری عمران سکندر بلوچ کا کہنا ہے کہ لاہور میں مثبت شرح 12 فیصد ریکار ڈکی گئی۔ دوسری جانب لاہورمیں کوروناکے تشویشناک مریضوں میں اضافہ جاری ہے ، محکمہ صحت کے مطابق وینٹی لیٹرز آکوپینسی ریٹ 65 فیصد تک بھر گئے ہیں۔ آکسیجن بیڈز 38 فیصد تک بھرے ہیں ۔شہر کے سرکاری و نجی ہسپتالوں میں 780 مریض زیر علاج ہیں۔ 190 تشویشناک مریض وینٹی لیٹرز پر ہیں، 398مریض آکسیجن پر زیر علاج ہیں۔ میو ہسپتال میں سب سے زیادہ 190 مریض داخل ہیں ۔سروسز ہسپتال میں 90اور جناح ہسپتال میں 105 مریض زیرعلاج ہیں۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement