نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- افغانستان کو تجارت اور اقتصادی امور میں ہمسایہ ممالک کی ضرورت ہے،ترجمان
  • بریکنگ :- توقع ہے ہمسایہ ممالک اپنا مثبت کردار جاری رکھیں گے،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- پنج شیر میں لڑائی ختم ہوچکی ہے،ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- کئی ممالک نے امریکا اور عالمی برادری کے سامنے ہمارے حق میں آواز اٹھائی،ترجمان
  • بریکنگ :- 6روز قبل چین اور روس نے بھی ہمای حکومت کے حق میں بات کی،ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- قطر،ازبکستان اور دیگر ممالک نے بھی مثبت موقف اپنایا،ترجمان طالبان
  • بریکنگ :- پاکستان ہمارا ہمسایہ ملک ہے،ان کا موقف قابل تحسین ہے،ذبیح اللہ مجاہد
  • بریکنگ :- افغانستان کے ساتھ عالمی برادری کے روابط ضروری ہیں،ذبیح اللہ مجاہد
Coronavirus Updates

افغانستان میں استحکام سے تاپی گیس منصوبہ بحال ہونیکا امکان

افغانستان میں استحکام سے تاپی گیس منصوبہ بحال ہونیکا امکان

دنیا اخبار

افغانستان میں امن بحال ہونے کے بعد تاپی گیس منصوبہ، پاکستان اور افغانستان کے راستے ریلوے لائن کی تعمیر

اسلام آباد (خبر نگار خصوصی) پانچ وسطی ایشیائی ریاستوں سے براستہ افغانستان پاکستان کی دو بین الاقوامی بندر گاہوں، کرغزستان اور ترکمانستان سے پاکستان میں بجلی کی درآمد کیلئے ٹرانسمیشن لائن کی تعمیر کے منصوبے بحال ہونے کے امکانات پیدا ہو گئے ۔ اس ضمن میں جلدہی پاکستان میں ان ممالک کے نمائندوں کا مشترکہ اجلاس بلوانے کی تیاریاں شروع کر دی گئی ہیں۔ پاکستان، ایران، روس اور چین کی جانب سے طالبان کی نئی حکومت کو مستحکم بنانے کی کوششوں کے بعد طالبان کی نئی حکومت کے ترجمان نے غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے ساتھ ایک تازہ ترین بات چیت میں ان تینوں منصوبوں کو خطے کے ممالک کے ساتھ تعاون کی نئی بنیاد قرار دیدیا اور کہا کہ افغانستان ان منصوبوں کی تکمیل کیلئے ہر ممکن سکیورٹی اور تعاون فراہم کرے گا ۔ طالبان حکومت کے اس رد عمل کی روشنی میں تاپی گیس منصوبے کی تکمیل کیلئے پاکستان نے جلد ہی ایشیائی ترقیاتی بینک، عالمی بینک اور دیگر عالمی مالیاتی اداروں سے رجو ع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ گیس منصوبے کے تحت افغانستان اور پاکستان کو11ارب مکعب فٹ گیس سالانہ دستیاب ہوگی جبکہ دوسرے مرحلے میں چھ کمپریسر سٹیشن لگانے کے بعد پاکستان کے راستے انڈیا کو گیس فراہم کی جائے گی ۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement