نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- ملک میں انکم ٹیکس گوشوارےجمع کرانےکاآخری روز
  • بریکنگ :- 26 لاکھ انکم ٹیکس گوشوارےجمع ہوئے،ترجمان ایف بی آر
  • بریکنگ :- انکم ٹیکس گوشواروں سے 48 ارب روپےکاٹیکس جمع ہوا،ایف بی آر
  • بریکنگ :- گزشتہ مالی سال اکتوبرکےوسط تک 18لاکھ گوشوارےجمع ہوئےتھے،ایف بی آر
  • بریکنگ :- گزشتہ مالی سال 29ارب 60 کروڑروپےکاٹیکس جمع ہواتھا،ایف بی آر
Coronavirus Updates

پنجاب کابینہ میں کوئی تبدیلی نہیں ہورہی: فیاض چوہان

پنجاب کابینہ میں کوئی تبدیلی نہیں ہورہی: فیاض چوہان

دنیا اخبار

کنٹونمنٹ الیکشن کے بعد آزاد امیدوار پارٹی میں شامل ہو رہے : میڈیا گفتگو ، پہلے کی طرح جلد پاکستان عالمی کرکٹ کا گڑھ بن جائیگا: ترجمان حکومت پنجاب

لاہور( سیاسی رپورٹرسے )پنجاب حکومت کے ترجمان فیاض چوہان نے کہا ہے کہ انکے خیال میں کابینہ میں تبدیلی نہیں ہورہی ، ویڈیو پیغام میں کہاکہ بڑے دنوں سے پنجاب کابینہ میں تبدیلی کی خبریں چل رہی ہیں ،میری اطلاعات کے مطابق پنجاب کابینہ میں کوئی تبدیلی نہیں ہورہی۔ وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ کا اختیار ہے کہ وہ جس کو چاہیں جہاں مرضی کھلائیں ،کسی کو اوپنر کھلانا ہے یا ون ڈاؤن ،یہ انکا استحقاق ہے کسی کو اگر پویلین بھیجنا ہے تو یہ بھی انکا اختیار ہے ،فیاض چوہان نے کہاکہ ترین گروپ کوئی نہیں سب پی ٹی آئی ہیں ،مجھے ترین گروپ کے لفظ سے چڑ ہے ۔ فیاض چوہان کاکہناتھاکہ پاکستان کی عوام اپنے ملک میں عالمی کرکٹ دیکھنا چاہتے ہیں ۔پہلے کی طرح جلد پاکستان عالمی کرکٹ کا گڑھ بن جائے گا۔ پاکستان کرکٹ ٹیم اور اے ٹیم کے درمیان، لیجنڈ کرکٹرز کا میچ ہو، یا اداکاروں کا۔کرکٹ چلتی رہنی چاہئے میچ کسی بھی ٹیم کے ساتھ ہو۔ فیاض چوہان نے کہاکہ آج کا پر امن پاکستان عالمی ٹیموں کے لیے ایک محفوظ ملک ہے ۔پاکستان جلد دوسری ٹیموں کو اپنے ہوم گراؤنڈز پر لانے میں کامیاب ہو جائے گا۔ میڈیا سے گفتگو میں فیاض چوہان نے کہا ہے کہ کنٹونمنٹ کے الیکشن میں تحریک انصاف نے بڑی کامیابی حاصل کی ،تمام آزاد امیدوار تحریک انصاف میں شامل ہو رہے ہیں ۔ میں لاہور اور پنڈی کی پر فارمنس کو بہتر قرار نہیں دیتا ، لیکن باقی اضلاع میں بہت اچھی پرفارمنس رہی ، جاوید لطیف کو استعمال کر کے حمزہ شہباز اور شہباز شریف پر تنقید نہیں بلکہ خنجر گھونپے گئے ہیں۔ چوہان نے کہا ہے کہ ڈیڑھ ارب روپے کسانوں کے لیے مختص کیے گئے ، اگر کسان کا نقصان ہوا تو اس کو پورا کیا جا سکے ۔ کسان کارڈ بہت بڑا کارنامہ ہے جس کے تحت سبسڈی مل رہی ہے ، 3 سو ارب روپے کے زرعی پروجیکٹس چلائے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ ای کریڈٹ سکیم کے تحت 45 ارب روپے کے قرضے دیئے جا رہے ہیں ، اب کسی کاشتکار کی کوئی رقم واجب الادا نہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمن نے پہلی دفعہ کوئی اچھی بات کی ، ان کی ساری بھاگ دوڑ ڈالر کے گرد گھومتی ہے ۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement