نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- مشقیں جوانوں کے اعتماد میں اضافےکا ذریعہ ہیں، آرمی چیف
  • بریکنگ :- مشقیں بہترین جنگی صلاحیتوں،پیشہ ورانہ مہارتوں کونکھارنےکاکلیدی ذریعہ ہیں، آرمی چیف
  • بریکنگ :- آنیوالے وقت میں ٹیکنالوجی سےلیس تربیت یافتہ فوج ناگزیرہے،آرمی چیف
  • بریکنگ :- آرمی چیف کاکمانڈرسدرن کمانڈلیفٹیننٹ جنرل محمدچراغ حیدرنےاستقبال کیا
  • بریکنگ :- آرمی چیف کاجنوبی کمانڈہیڈکوارٹرز ملتان کا دورہ، آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- آرمی چیف کوفارمیشن کےآپریشنل،تربیتی اورانتظامی امورپربریفنگ
  • بریکنگ :- آرمی چیف نےکوٹ عبدالحکیم میں اسٹرائیک کورکی انٹیگریٹڈٹریننگ کامشاہدہ کیا
  • بریکنگ :- آرمی چیف نےفیلڈفارمیشن کی تربیتی مشقوں کامشاہدہ کیا،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- آرمی چیف نےجوانوں کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں اورعزم کوسراہا،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- چیلنجزکےباوجودہماری توجہ پاک فوج کی روایتی صلاحیتیں بڑھانےپرہے،آرمی چیف
  • بریکنگ :- آئی ایس پی آر،ایئرڈیفنس شعبوں میں صلاحیت بڑھانےپرتوجہ دےرہےہیں،آرمی چیف
  • بریکنگ :- سائبراینڈمیکنائزیشن میں صلاحیت بڑھانےپرتوجہ دی جارہی ہے،آرمی چیف
  • بریکنگ :- پاک فوج ملک کودرپیش ہرچیلنج کامقابلہ کر سکتی ہے، آرمی چیف
  • بریکنگ :- جدیدٹیکنالوجی سے لیس تربیت یافتہ فوج ہی ملک کادفاع کرسکتی ہے،آرمی چیف
Coronavirus Updates

35 لاکھ درخواستیں زیر التوا، مزید گیس کنکشنز نہیں دے سکتے : سوئی ناردرن

35 لاکھ درخواستیں زیر التوا، مزید گیس کنکشنز نہیں دے سکتے :  سوئی ناردرن

دنیا اخبار

اتنی گیس نہیں کہ سب کو کنکشن دئیے جائیں،ایس این جی پی ایل ، درآمد شدہ گیس پر انحصار بہت بڑھ گیا ،چیئرمین اوگرا ، موبائل کمپنیوں کا ٹاور کنٹریکٹرز کو ہراساں کرنیکا انکشاف، علی اعوان ہیلپ لائن کال کے چارجز لینے پر کمپنیوں پر برس پڑے

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر،آن لائن)ملک بھر میں گیس میٹرز کی 35 لاکھ درخواستیں زیر التوا ہیں۔ اتنی گیس نہیں ہے کہ سب کو کنکشن دئیے جائیں۔ ایس این جی پی ایل نے مزید گیس کنکشنز دینے سے معذرت کرلی۔ موبائل کمپنیوں کا ٹاور کنٹریکٹرز کو بھی ہراساں کرنے کا انکشاف ہوا، کمپنیاں موبائل سگنلز کو بہتر کرنے میں مسلسل ناکام ،علی نواز اعوان ہیلپ لائن کال کے چارجز لینے پر موبائل کمپنیوں پر برس پڑے ۔ کمیٹی نے موبائل سگنلز، ٹیکسز، صارفین کو درپیش مشکلات پر الگ اجلاس بلانے کا فیصلہ کیا ہے ۔کشور زہرہ کی زیر صدارت قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی کابینہ سیکرٹریٹ کا اجلاس ہوا۔ چیئرمین اوگرا کا کہنا تھا کہ قدرتی گیس کی قیمت کا تعین اوگرا سال میں دو دفعہ کرتی ہے ۔ مہنگائی عوام کی کمر توڑ رہی ہے ۔ گیس کی قیمتوں میں کمی نہیں آرہی روز بروز بڑھ رہی ہیں۔ آج سے پانچ سال پہلے ہم گیس درآمد نہیں کرتے تھے ۔درآمد شدہ گیس پرانحصار بہت بڑھ گیا ہے ۔ قانون بننے کے بعد پٹرولیم ایکٹ کا سہارا نہیں لینا پڑے گا۔ ایس این جی پی ایل نے 154 فیصد قیمت بڑھانے کا کہا ہے ہم نے 14 فیصد بڑھانے کی سفارش کی ۔ ممبر کمیٹی محمد ہاشم کا کہنا تھا کہ قیمتوں میں اضافے کا حتمی فیصلہ اب حکومت کریگی۔ چوری میں آپ کے اپنے لوگ ملوث ہیں۔ قیمتیں کنٹرول کرنی چاہئیں یہ عوام کا مسئلہ ہے ۔چیئرمین اوگرا کا کہنا تھا کہ لوگ بل ادا نہیں کرتے ۔ ان کا بوجھ بل ادا کرنے والوں پرپڑتا ہے ۔سوئی گیس حکام نے کمیٹی کو بتایا کہ کوئٹہ میں نان کسٹمر چوری کررہے ہیں۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement