نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- آئندہ ہفتے3ارب ڈالرسعودی عرب سےآئیں گے،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- دسمبرمیں سکوک بانڈزجاری کرنےجارہےہیں،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- جب سےپاکستان بنا22آئی ایم ایف پروگرام لیےگئے،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- پیپلزپارٹی 9اور(ن)لیگ نے4آئی ایم ایف پروگرام لیے،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- تاریخ کاسب سےبڑاپروگرام10ارب ڈالرپیپلزپارٹی نےلیاتھا،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- اسٹیٹ بینک کاکام مانیٹری اورایکسچینج پالیسی بناناہے،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- ہم اسٹیٹ بینک کوخودمختاری دیناچاہتےہیں،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- کوروناکےدوران غریب عوام کوریلیف دیاگیا،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- پاکستان کی ایکسپورٹ بڑھ رہی ہے،ترجمان وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- اس وقت ملک میں مہنگائی 8.8فیصد ہے،ترجمان وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- پوری دنیامیں مہنگائی کا30سالہ ریکارڈٹوٹ چکاہے،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- عالمی مارکیٹ سےآنےوالی اشیاکی قیمتوں میں اضافہ ہوا،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- یورپ میں بھی گیس کی قیمتوں میں اضافہ ہواہے،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- 5سالہ مدت کےدوران معیشت بہترکرکےجائیں گے،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- ہم ٹیکسوں کےنظام کوٹھیک کررہےہیں،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- اداروں میں اصلاحات کاعمل جاری ہے،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- پنشن کےحوالےسےکمیٹی 3ماہ میں سفارشات پیش کرےگی،مزمل اسلم
  • بریکنگ :- تمام کام 2023سےپہلےنمٹادیں گے،ترجمان وزارت خزانہ
  • بریکنگ :- اگلےڈیڑھ ماہ میں7ارب ڈالرآجائیں گے،ترجمان وزارت خزانہ
Coronavirus Updates

چمن پاک افغان بارڈر دوبارہ کھولنے کیلئے مذاکرات بے نتیجہ

چمن پاک افغان بارڈر دوبارہ کھولنے کیلئے مذاکرات بے نتیجہ

دنیا اخبار

عوام کے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے یہ سلسلہ بند کیا جائے :طالبان

چمن(نامہ نگار )چمن پاک افغان بارڈر دوبارہ کھولنے کے حوالے سے مذاکرات بے نتیجہ ختم ہو گئے ۔ پاکستانی وفد کی قیادت ایڈیشنل چیف سیکرٹری نے کی جبکہ افغانی وفد کی گورنر کندھار حاجی یوسف وفا نے قیادت کی ۔ افغانی وفد نے افغان شہریوں کو آنے اور پاک افغان بارڈر سے پاک فوج کو ہٹا کر لیویز فورس تعینات کر نے کا بھی مطالبہ کیا ۔ افغان وفد نے کہا کہ ہمارے عوام کے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے یہ سلسلہ بند کیا جائے جبکہ پاکستان کی جانب سے باب دوستی گیٹ کھولنے پر زور دیا گیا اور پاک افغان بارڈر کے قریب آبادی پر مشترکہ کمیٹی بنانے کا کہا گیا تاکہ پاک افغان بارڈر پر باڑ کو مکمل کیا جا سکے جس پر دونوں ممالک کے حکام کی جانب سے اتفاق نہ ہو سکا جس پر مذاکرات کو حتمی شکل دے دی گئی افغانستان کا وفد قندھار روانہ ہو گیا ہے جبکہ پاکستانی وفد کوئٹہ روانہ ہو گیا ۔ پاک افغان بارڈر دوبارہ کھولنے کے حوالے سے ڈیڈلاک برقرار رہا۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement