نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- نومبرمیں مہنگائی 11.5 فیصدہوگئی، ادارہ شماریات
  • بریکنگ :- اکتوبرمیں مہنگائی 9.2 فیصدتھی،ادارہ شماریات
  • بریکنگ :- نومبر2020میں مہنگائی 8.3 فیصدتھی، ادارہ شماریات
  • بریکنگ :- مہنگائی 21 ماہ کی بلندترین سطح پرپہنچ گئی، ادارہ شماریات
  • بریکنگ :- شہروں میں مہنگائی 12اوردیہات میں 10.9 فیصدرہی، دستاویز
  • بریکنگ :- نومبرمیں ماہانہ بنیادوں پرٹماٹر 131.64 فیصدمہنگے
  • بریکنگ :- گھی 10.87 اورکوکنگ آئل 9.71 فیصدمہنگا
  • بریکنگ :- سبزیاں 10.47،انڈے 10.19اورگوشت 2.63 فیصدمہنگا
  • بریکنگ :- نومبرمیں ماہانہ بنیادوں پردودھ 2.33اورچینی 1.43 فیصدمہنگی
  • بریکنگ :- نومبرمیں سالانہ بنیادوں پرگھی 58.29فیصدمہنگا
  • بریکنگ :- نومبرمیں سالانہ بنیادوں پر کوکنگ آئل 53.59 فیصدمہنگا
  • بریکنگ :- آٹا 10.26اورآلو 17.66 فیصدمہنگے
  • بریکنگ :- بجلی چارجز 47.87 ،پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 40.81 فیصداضافہ
  • بریکنگ :- ادویات کی قیمتوں میں 11.76 فیصداضافہ ریکارڈ
  • بریکنگ :- نومبرمیں ماہانہ بنیادوں پرمہنگائی میں 3 فیصداضافہ ریکارڈ
  • بریکنگ :- نومبرمیں سالانہ بنیادوں پرمہنگائی میں 0.8فیصداضافہ
  • بریکنگ :- نومبرمیں شہری علاقوں میں مہنگائی 12 فیصدہوگئی
  • بریکنگ :- دیہی علاقوں میں مہنگائی 10.9 فیصدہوگئی
Coronavirus Updates

8لاکھ ای وی ایم درکار،حکومت فنڈزدے :الیکشن کمیشن

8لاکھ ای وی ایم درکار،حکومت فنڈزدے :الیکشن کمیشن

دنیا اخبار

انتخابات میں 23ماہ رہ گئے ،وزارت پارلیمانی امورکے نام خط

اسلام آباد(نامہ نگار)الیکشن کمیشن نے آئندہ عام انتخابات میں جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کے حوالے سے حکومت کو فنڈز جاری کرنے سے متعلق خط لکھ دیا،ذرائع کے مطابق آئندہ عام انتخابات کیلئے الیکشن کمیشن 8لاکھ سے زائد الیکٹرانک ووٹنگ مشینیں خریدے گا،خط میں کہاگیا ہے کہ الیکشن کمیشن نے وزارت پارلیمانی امور سے معاملہ متعلقہ حکام تک پہنچانے کا مطالبہ کیا ہے جبکہ ای وی ایم سٹوریج کیلئے حکومت کو کوہسار بلاک میں 2 فلورمختص کرنے کی بھی تجویز دے دی ہے ،خط میں کہا گیا ہے کہ ممکنہ طور پر آئندہ عام انتخابات اکتوبر 2023ء میں ہوں گے اور ہمیں ان 23 ماہ میں جدید ٹیکنالوجی کے استعمال سے متعلق اہم اقدامات کرنے ہیں۔ الیکشن کمیشن کو 8 لاکھ سے زائد الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کی سٹوریج کیلئے ویئر ہاؤس درکار ہوگا جب کہ ڈیٹا سینٹر، کنٹرول سینٹر، جدید لیب، پرنٹنگ اور ٹریننگ سیشنز کیلئے بھی عمارت درکار ہوگی لیکن ایک سال گزرنے کے باوجود پلاننگ کمیشن نے عمارت کی تعمیر کے لئے فنڈز جاری نہیں کئے ۔خط میں کہا گیا ہے کہ ضروری انفراسٹرکچر کی تعمیر کے لئے فنڈز میں تاخیر سے پہلے ہی وقت کاضیاع ہوچکا ہے ،پلاننگ کمیشن اسلام آباد کے سیکٹر ایچ الیون میں عمارت کی تعمیر کیلئے فوری فنڈز جاری کرے اور وزارت ہاؤسنگ اینڈ ورکس عمارت کی تعمیر کیلئے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات کرے ، ویئر ہاؤس بر وقت تعمیر نہ ہونے کے خدشہ کے پیش نظرحکومت کسی سرکاری عمارت میں جگہ مختص کرے ۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement