نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- تحریک انصاف کی لوٹ مار،پاکستان دنیابھرمیں رسواہوگیا،حمزہ شہباز
  • بریکنگ :- ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ حکومت کیخلاف چارج شیٹ ہے،حمزہ شہباز
  • بریکنگ :- ایک سال میں پاکستان کرپشن انڈیکس میں 16درجےاوپرچلاگیا،حمزہ شہباز
  • بریکنگ :- احتساب کاشورمخالفین پرجھوٹےکیسزبنانےکاذریعہ تھا،حمزہ شہباز
  • بریکنگ :- کرپشن کاخاتمہ ن لیگ کےدورمیں ہوا،لیگی رہنماحمزہ شہباز
  • بریکنگ :- پاکستان کو 127ویں درجےسے 117نمبرپرلےآئےتھے،حمزہ شہباز
  • بریکنگ :- معیشت کھنڈربن چکی،پاکستان مہنگائی میں دنیامیں تیسرےنمبرپرہے،حمزہ شہباز
Coronavirus Updates

خواتین کوتنگ کرنیوالوں کے ساتھ پریانتھاکارویہ سخت تھا

خواتین کوتنگ کرنیوالوں کے ساتھ پریانتھاکارویہ سخت تھا

کوئی ملازم بیمار ہوتاتو اپنی گاڑی میں ہسپتال بھجواتے ،غریبوں کی مالی مدد کرتے

لاہور ( مانیٹرنگ ڈیسک )پریانتھا کمارا وزیرآباد روڈ سیالکوٹ پرواقعہ فیکٹری کے جنرل منیجرتھے جنہیں گزشتہ روز مشتعل ہجوم نے تشدد کر کے قتل کر دیا۔ سیالکوٹ کی ایک رہائشی خاتون جن کی بیٹیاں اس فیکٹری میں کام کرتی ہیں نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر انڈپینڈنٹ اردوکوبتایا کہ میری بچیاں فیکٹری میں چھ سال سے کام کر رہی تھیں۔ پریانتھا کمارا بہت اچھے آدمی تھے ۔ خاص طور پر فیکٹری میں کام کرنے والی خواتین کا بہت خیال رکھتے تھے واقعے پر دلی افسوس ہوا ۔خاتون کا مزید کہنا تھا فیکٹری کے اندر خواتین کو تنگ کرنیوالوں کے ساتھ پر یانتھا کا رویہ کافی سخت ہوتا تھا۔کوئی ملازم بیمار ہوجاتا تو وہ اسے خود اپنی گاڑی میں فیکٹری کے ہسپتال بھجواتے اور غریب ملازمین کے گھر جا کر ان کی مالی مدد کرتے تھے ۔ ان کے سوشل میڈیا اکاؤنٹ کے مطابق وہ مذکورہ فیکٹری میں 2013 سے جنرل منیجرکے طور پرکام کر رہے تھے ۔ فیکٹری میں ایک ہزار سے زائد ملازمین کام کرتے ہیں۔ سیالکوٹ پولیس کے ترجمان خرم شہزاد نے بتایا کہ پریانتھا 2010 سے پاکستان میں مقیم تھے جب کہ ایک دو سال قبل ان کی اہلیہ اپنے بچے سمیت پاکستان سے سری لنکا واپس چلی گئی تھیں۔ انکی عمر تقریباً 50 برس تھی، انہوں نے سری لنکا کی یونیورسٹی آف پیرادنیا میں 2000 سے 2005 تک انجینئرنگ کی تعلیم حاصل کی۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement