نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- منظورشدہ بجٹ تھانے کونہیں دیاجاتا،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- تھانیدارکے پاس قلم اورسیاہی کےپیسے نہیں ہوتے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- یقینی بنایا ہے کہ فنڈتھانےکوہی دیاجائےگا،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- شواہد کی ریکارڈنگ کیلئےکئی دن درکار ہوتے ہیں،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- انگلینڈمیں شواہدجمع کرنےکیلئےلائیوریکارڈنگ ہوتی ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- بیرون ملک یاشہررہنےوالوں کےبیان ویڈیولنک کےذریعے ریکارڈہوں گے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- ان کیسز پر توجہ دی جائے گی جن میں شواہدموجود ہوں گے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- عادی مجرموں سے پلی بارگین نہیں کی جائےگی،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- 5سال کی سزاپانےوالا 20 سال تک سزاکاٹتارہتا ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- اس نظام میں جج فیصلہ کرےگاجرم کی نوعیت کیا ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- پلی بارگین چھوٹے جرائم کیلئے ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- مقصد یہ ہےبڑےجرائم پرتوجہ دی جاسکے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- لوئرکورٹس میں وکلاکےالتوالینےسےفیصلوں میں تاخیرہوتی ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- گواہوں کے تحفظ کی بھی پالیسی بنادی گئی ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- کرمینل قوانین وزارت قانون نہیں،وزارت داخلہ کامضمون ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- وزیراعظم کومحسوس ہوایہ کام وزارت قانون کرسکتی ہے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- تمام اسٹیک ہولڈرزسےمشاورت کرکےمسودہ تیارکیاگیا،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- منگل کومسودہ کابینہ میں پیش کیاجائےگا،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- مسودہ پارلیمان میں پیش کیاجائےگا،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- اپوزیشن سیاست نہ کرے،اس قانون کوپاس کرے،فروغ نسیم
  • بریکنگ :- ہرتھانےکاپولیس بجٹ منظورہوتاہے،فروغ نسیم
Coronavirus Updates

پریانتھا ہمیشہ پاکستان کی تعریف کرتے تھے ، بھائی

پریانتھا ہمیشہ پاکستان کی تعریف کرتے تھے ، بھائی

پریانتھا خوش اخلاقی سے ملتے ، جھگڑنے والے انسان نہیں تھے ، محلے دار

سیالکوٹ، کولمبو(خبرایجنسیاں)سیالکوٹ میں مشتعل ہجوم کے ہاتھوں قتل ہونے والے سری لنکن فیکٹری منیجر پریانتھا کمارا کے بھائی نے قتل سے متعلق ہونے والی تحقیقات پر اطمینان کا اظہار کیا ہے ۔نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے پریانتھا کے بھائی سری شانتا کمارا کا کہنا تھا کہ انھیں سیالکوٹ واقعے پر کی جانے والی تحقیقات پر اطمینان ہے ۔ وزیراعظم عمران خان اس معاملے پر درست سمت میں تحقیقات کروا رہے ہیں۔پریانتھا کے بھائی کا کہنا تھا کہ بھائی ہمیشہ پاکستان کی تعریف کرتے تھے ، ان سے کبھی پاکستان کے خلاف کوئی شکایت نہیں سنی۔ انھوں نے مزید بتایا کہ حادثے کے باعث پریانتھا کی اہلیہ اب تک صدمے سے نہیں نکل سکی جبکہ والدہ کو بھائی کے قتل سے اب تک آگاہ نہیں کیا ۔ ادھرپریانتھا کے محلے دار رمضان نے بتایا کہ پریانتھا خوش اخلاقی سے ملتے تھے ، وہ جھگڑا کرنے والے انسان نہیں تھے ۔انہوں نے کہا کہ پریانتھا سے صبح واک کرتے وقت ملاقات ہوتی تھی، وہ ایک اچھے انسان تھے ۔ انکا کہنا تھا کہ پریانتھا کے ساتھ جو بھی ہوا وہ افسوسناک اور قابل مذمت ہے ۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement