نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- لاہور:ٹوکیو اولمپکس میں پاکستان کا نام روشن کرنے والے طلحہٰ طالب کی وطن واپسی
  • بریکنگ :- طلحہٰ طالب غیر ملکی ایئرلائن کے ذریعےلاہور ایئرپورٹ پہنچے
  • بریکنگ :- لاہور:پاکستان ویٹ لفٹنگ فیڈریشن کےعہدیداران اور کھلاڑیوں نےاستقبال کیا
  • بریکنگ :- لاہور: 21 سالہ طلحہٰ نے 67 کلو گرام کیٹگری میں پانچویں پوزیشن حاصل کی
  • بریکنگ :- لاہور: طلحہ ٰطالب نے مجموعی طور پر 320 کلو گرام وزن اٹھایا تھا
Coronavirus Updates

پاکستانی ٹیم کی ناکامی سے قومی اسمبلی کے ایوان گونجنے لگے

پاکستانی ٹیم کی ناکامی سے قومی اسمبلی کے ایوان گونجنے لگے

دنیا اخبار

ہیڈ کوچ،بالنگ کوچ اور چیف سلیکٹر کو ان کے عہدوں سے فوری ہٹانے کے مطالبات

کراچی(اسپورٹس ڈیسک)پاکستانی کرکٹ ٹیم کی حالیہ ناکامیوں کی بازگشت قومی اسمبلی کے ایوانوں تک بھی جا پہنچی جس کے بعد ہیڈ کوچ،بالنگ کوچ اور چیف سلیکٹر کو ان کے عہدوں سے فوری ہٹانے کے مطالبات بھی کئے جانے لگے ہیں۔تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی میں ایک قرارداد پیش کرتے ہوئے مطالبہ کیا گیا ہے کہ قومی کرکٹ ٹیم کی حالیہ ناکامیوں کے پس پشت وجوہات کا تعین کیا جائے تاکہ ان کا سدباب ہو سکے ۔رکن قومی اسمبلی اقبال محمد علی خان کا موقف ہے کہ پی سی بی کے سرپرست اعلیٰ وزیر اعظم عمران خان کیلئے بورڈ میں سرایت کر جانے والے پسند اور ناپسند کے کلچر کا نوٹس لینا ازحد ضروری ہو گیا ہے ۔قومی اسمبلی میں پیش کردہ قرارداد میں ڈیمانڈ کی گئی ہے کہ پاکستانی ٹیم کی ون ڈے سیریز میں دوسرے درجے کی انگلش ٹیم کیخلاف ناکامیوں کی تحقیقات کی جائیں اور ان شکستوں کے ذمہ دار کوچنگ اسٹاف اور ٹیم انتظامیہ کا احتساب کیا جائے ۔واضح رہے کہ قرارداد میں ہیڈ کوچ مصباح الحق،بالنگ کوچ وقار یونس اور چیف سلیکٹر محمد وسیم کی برطرفی کا مطالبہ کرنے کے ساتھ ہی یہ درخواست بھی کی گئی ہے کہ ان حالات کی بھی پوری گہرائی کے ساتھ تحقیق کی جائے جن کے باعث بیٹنگ کوچ یونس خان کو انگلینڈ کے اہم دورے سے قبل اپنے عہدے سے دستبردار ہونا پڑا اور پاکستانی بیٹسمین کسی بیٹنگ کوچ کے بغیر سیریز میں شریک ہیں۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement