نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- آرمی چیف کاپشاورکورہیڈکوارٹرزکادورہ،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- آرمی چیف کو سیکیورٹی صورتحال پربریفنگ،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- ضم شدہ اضلاع میں ترقیاتی کاموں پربریفنگ،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- پاک افغان بارڈرسےمتعلق بھی بریفنگ،آئی ایس پی آر
  • بریکنگ :- دہشتگردی کےخلاف پاک فوج پرعزم ہے،آرمی چیف
  • بریکنگ :- شہداکی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی،آرمی چیف
Coronavirus Updates

زیبرا کے جسم پر سیاہ و سفید دھاریوں کے بارے میں تحقیق

زیبرا کے جسم پر سیاہ و سفید دھاریوں کے بارے میں تحقیق

زیبرا کے جسم پر سیاہ و سفید دھاریوں کا سیکڑوں سالہ پرانا معمہ حل ہوگیا،ایک تحقیق کیمطابق اصل جواب میلانوسائٹس نامی خلیات میں چھپا ہوا ہے

لاہور(نیٹ نیوز)یہ خلیات رنگت بنانے والے ہارمون میلانین کو بناتا ہے جو زیبرا اور تمام جانداروں کے بالوں اور جلد کی رنگت کا تعین کرتا ہے ۔ جب زیبرا کی کھال اگتی ہے تو میلانوسائٹس جڑوں کو حکم دیتا ہے کہ بالوں کی رنگت ہلکی ہونی چاہیے یا گہری، یہ تعین جسم کے حصوں کی بنیاد پر کرتا ہے ۔یہ خلیات زیادہ میلانین والی سیاہ کھال کو تشکیل دیتا ہے جس سے زیبرا کا مخصوص پیٹرن ہماری آنکھوں کے سامنے آتا ہے ۔ زیبرا کے سفید بالوں میں میلانین نہیں ہوتا اور میلانوسائٹس سے بنتے ہیں جو ٹرن آف ہوجاتا ہے ۔آسان الفاظ میں زیبرا کے اگنے والے بال قدرتی طور پر سیاہ ہوتے ہیں جو اس جانور کو سیاہ جلد کے ساتھ سفید پٹیاں فراہم کرتے ہیں۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement