نیوز الرٹ
  • بریکنگ :- ایف آئی اےکارپوریٹ کرائم سرکل کالیاقت آبادمیں چھاپہ
  • بریکنگ :- کراچی:کارروائی کےدوران 4 افرادکوحراست میں لےلیاگیا
  • بریکنگ :- ملزمان بچوں کی جعلی ادویات بناکرمارکیٹ میں فروخت کرتےتھے،ایف آئی اے
  • بریکنگ :- ایف آئی اےکےرنچھوڑلائن اورمیڈیسن مارکیٹ میں بھی چھاپے
  • بریکنگ :- کراچی:میڈیسن مارکیٹ میں 5 دکانوں کوسیل کردیاگیا،ایف آئی اے
  • بریکنگ :- دکانوں میں سرکاری اسپتالوں کی ادویات فروخت کی جارہی تھیں،حکام
  • بریکنگ :- کراچی:پکڑی جانیوالی ادویات کی مالیت لاکھوں روپےہے
Coronavirus Updates

پراسرار اور عظیم کائناتی بلبلے میں ہمارا نظامِ شمسی بند

پراسرار اور عظیم کائناتی بلبلے میں ہمارا نظامِ شمسی بند

میری لینڈ(نیٹ نیوز)ماہرینِ فلکیات کی ایک عالمی ٹیم کا کہنا ہے کہ ہمارے نظامِ شمسی کے گرد عظیم الشان اور پراسرار ‘کائناتی بلبلہ’ اُن واقعات کے تسلسل کا نتیجہ ہے جو آج سے ایک کروڑ 40 لاکھ سال پہلے شروع ہوئے تھے ۔

 فلکیاتی اصطلاح میں یہ علاقہ ‘لوکل ببل’ جبکہ عوامی زبان میں ‘کائناتی بلبلہ’ کہلاتا ہے ۔نئی تحقیق میں امریکا، جرمنی، آسٹریا اور کینیڈا کے ماہرین نے حالیہ برسوں میں کیے گئے تفصیلی اور حساس فلکیاتی مشاہدات اور پیچیدہ کمپیوٹر سمیولیشنز کی مدد سے دریافت کیا کہ یہ ‘کائناتی بلبلہ’ 14 ملین (ایک کروڑ 40 لاکھ) سال پہلے ایک سپرنووا دھماکے سے بننا شروع ہوا تھا۔

اس کائناتی بلبلے کے بیرونی کناروں پر نئے ستارے بھی بڑی تعداد میں بننے لگے اور یہ سلسلہ آج بھی جاری ہے ۔البتہ یہ بلبلہ مسلسل پھیلتا چلا گیا اور آج تقریباً 1,000 نوری سال جتنا وسیع ہوچکا ہے ۔ تحقیق ریسرچ جرنل ‘‘نیچر’’ میں شائع ہوئی ہے ۔

روزنامہ دنیا ایپ انسٹال کریں
Advertisement